صرف چند سیکنڈز میں گہری نیند، سائنسدانوں نے حیرت انگیز ایجاد کر لی

Sleep head band
12اپریل2022
(فوٹو: شٹر اسٹاک)

ویب ڈیسک: ( اردو گرام آنلائن ) ماہرین نے “سلیپ لوپ” نامی آلہ تیار کیا ہے جو نیند کی کمی کے شکار افراد میں گہری نیند لانے کا باعث بنتا ہے۔ یہ طبی آلہ خاص فریکوئنسی کی آواز خارج کر کے دماغ کی ان امواج (لہریں) کو زائل کر دیتا ہے جو نیند میں خلل ڈالتی ہیں۔

طبی ماہرین کے مطابق گہری نیند انسانی صحت کے لئے بہت ضروری ہوتی ہے جس کے باعث دماغ سے فاسد مواد کا اخراج بھی ہوتا ہے۔ اس کے ساتھ دماغی خلیات کی ٹوٹ پھوٹ زائل کرنے میں بھی گہری نیند بہت ضروری ہوتی ہے۔

ماہرین کے مطابق اس ہینڈ بینڈ کو سلیپ لوپ کا نام دیا گیا ہے جسے نیند کی کمی کا شکار افراد پہن کر گہری نیند سے مستفید ہو سکتے ہیں۔ اس ہیڈ بینڈ میں الیکٹروڈ اور مائیکروچپ موجود ہے جو دماغی سرگرمیوں پر نظر رکھتے ہیں۔ جسے ہی دماغ سست امواج کے تحت گہری نیند میں داخل ہوتا ہے، سلیپ لوپ مخصوص قسم کی قابلِ سماعت آوازیں پیدا کرتا ہے جو نیند لانے والے دماغی خلیات سے ہم آہنگ ہونے کے بعد سست دماغی لہروں کو بڑھاتی ہیں، جس کے باعث انسان لاشعوری طور پر گہری نیند میں چلا جاتا ہے۔

ماہرین کے مطابق پہلے مرحلے میں 60 سے 80 سال تک کے افراد کو سلیپ لوپ پہنا کر انکی نیند کا جائزہ لیا گیا۔ تمام شرکا نے بینڈ پہننے کے بعد گہری نیند کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ آلے کو پہننا اور چلانا بھی ایک آسان عمل ہے۔ چار ہفتوں تک شرکا نے اس آلے کو استعمال کیا، جس کے نتیجے میں دو ہفتے تک آلے نے کام نہیں کیا جبکہ دو ہفتے تک وہ کام کرتا رہا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اس کی خبر نہ پہننے والے کو تھی اور نہ ہی سائنسدانوں کو، تاہم صرف ڈیٹا ہی اس کی تصدیق کررہا تھا۔ لیکن جب ماہرین نے ان افراد میں نیند کی بہتری کو ریکارڈ کیا، اس وقت سلیپ لوپ بہترین طریقے سے کام کررہا تھا۔

اس حوالے سے ای ٹی ایچ زیورخ میں واقع اعصابی تجربہ گاہ کی سائنسدان ڈاکٹر کیرولین کا کہنا ہے کہ ہمارے دماغ میں دھیمی امواج (سلو ویوز) کو ہیڈفون کی مخصوص آوازوں کی بدولت مزید بہتر بنایا جاسکتا ہے۔ تجربہ گاہ میں مریضوں پر آزمانے کے بعد اس ڈیوائس کے اچھے نتائج برآمد ہوئے جبکہ لوگوں نے بھی گہری نیند کا اعتراف کیا، تاہم اب اس آلے کو گھروں میں آزمانا باقی ہے۔

Facebook Comments