محسن عباس حیدر اور انکی اہلیہ (فاطمہ سہیل) کی ازدواجی زندگی اختتام پذیر ہو گئی

26ستمبر2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (لاہور) گلوکار و اداکار محسن عباس حیدر اور فاطمہ سہیل کے درمیان خلع کی ڈگری جاری کر دی گئی، جس کے ساتھ ہی ان کا ازدواجی سفر اختتام کو پہنچ گیا۔

تفصیلات کے مطابق جج بابر ندیم نے فاطمہ سہیل کی خلع کی درخواست پر سماعت کی۔ اس دوران فاطمہ سہیل کا کہنا تھا کہ وہ اب محسن عباس حیدر کے ساتھ مزید نہیں رہنا چاہتی اور نہ ہی ان سے صلع کر سکتی ہیں۔ محسن عباس حیدر نے اپنے بیان میں کہا کہ وہ بھی اب فاطمہ سہیل کے ساتھ زندگی گزارنا نہیں چاہتے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ محسن عباس حیدر ایک بار پھر شادی کرنے کیلئے تیار

عدالت نے دونوں کے بیانات کو سننے کے بعد خلع کی ڈگری جاری کر دی۔

عدالت کے باہر جب رپورٹرز نے محسن عباس حیدر سے سوال کیا کہ ان کے بیٹے کی تحویل ماں یا باپ میں سے کسے دی جائے گی؟ تو اس پر ان کا کہنا تھا کہ ‘بیٹے کے لیے ماں اور باپ دونوں کا پیار بےحد ضروری ہے، البتہ اس کی تحویل کے حوالے سے وکلاء سے مشورہ کر کے قانونی کارروائی کے حوالے سے سوچیں گے۔

خیال رہے کہ رواں سال 20 جولائی کو فاطمہ سہیل نے فیس بک پر ایک پوسٹ کے ذریعے محسن عباس حیدر پر جنسی تشدد کرنے اور شادی شدہ ہونے کے باوجود نازش جہانگیر نامی ماڈل سے تعلقات رکھنے کا الزام لگایا تھا اور محسن کے خلاف مقدمہ لڑنے کا اعلان کیا تھا۔

بعدازاں محسن عباس حیدر نے لاہور میں پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ ان کی اہلیہ نے ان پر جھوٹا الزام لگایا ہے اور طلاق ہی واحد راستہ رہ گیا ہے۔

دوسری جانب ماڈل نازش جہانگیر نے بھی سوشل میڈیا پر فاطمہ کی جانب سے لگائے الزامات کو بے بنیاد قرار دیا تھا۔

Facebook Comments