ڈیمی مور کے دعوؤں نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا

At age 15, I was raped and my mom took money from that person! Demi Moore
25ستمبر2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (ہولی وڈ) ماضی کی مشہور ہولی وڈ اداکارہ ڈیمی مور نے دعویٰ کیا ہے کہ 15 برس کی عمر میں ان کا ریپ کیا گیا تھا اور ان کی والدہ نے ان کا ریپ کرنے والے شخص سے پیسے لیے تھے۔

تفصیلات کے مطابق ڈیمی مور نے یہ انکشاف امریکی ٹی وی چینل امریکن براڈ کاسٹنگ کمپنی (اے بی سی) کے مقبول پروگرام گڈ مارننگ امریکا میں کیا تھا۔ ڈیمی مور کا کہنا تھا کہ جس شخص نے 15 برس کی عمر میں ان کا ریپ کیا، وہ انہیں ٹھیک طرح سے جانتی تھیں اور ایسا کرنے کیلئے اس کو ان کی والدہ نے سہولت فراہم کی۔

اداکارہ نے واضح طور پر یہ تسلیم نہیں کیا کہ ان کی والدہ نے 500 ڈالر کے عوض اس شخص کو ان کا ریپ کرنے کی اجازت دی، تاہم انہوں نے اعتراف کیا تھا کہ ایسا کرنے والے شخص سے والدہ نے پیسے لیے تھے۔ اداکارہ نے یہ انکشافات اپنی سوانح عمری (انسائڈ آؤٹ) کو فروخت کیلئے پیش کیے جانے کے موقع پر کیے تھے۔

واضح رہے کہ ان کی سوانح عمری کو گذشتہ روز امریکا سمیت متعدد ممالک میں فروخت کیلئے پیش کیا گیا اور ان کی کتاب سامنے آتے ہی ان سے متعلق متعدد خبریں سامنے آئیں اور ایک نیا پنڈورا باکس کھل گیا۔ ان کی کتاب سامنے آنے کے بعد ہی شوبز ویب سائٹ ’پیج سکس‘ نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا تھا کہ ڈیمی مور نے اپنی کتاب میں جہاں دیگر حیران کن دعوے کیے ہیں، وہیں انہوں نے ماضی میں ساتھ کام کرنے والے اداکار 54 سالہ جان کرائر کے حوالے سے بھی حیران کن دعویٰ کیا۔

رپورٹ کے مطابق اداکارہ نے اپنی کتاب میں دعویٰ کیا ہے کہ وہ ہی پہلی خاتون ہیں جنہوں نے اداکار جان کرائر سے پہلی بار مباشرت کی۔ اداکارہ نے اپنی کتاب میں ماضی کو یاد کرتے ہوئے لکھا ہے کہ وہ اور جان کرائر 1980ء کی دہائی میں ریلیز ہونے والے رومانٹک کامیڈی ڈرامے (نو اسمال افیئر) میں ایک ساتھ کام کر رہے تھے اور اس ڈرامے کی شوٹنگ کے دوران ہی انہوں نے مباشرت کی۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ اداکارہ نے اپنی کتاب میں لکھا کہ ڈرامے میں وہ ایک نائٹ کلب ڈانسر کا کردار ادا کر رہی تھیں جبکہ جان کرائر ایک نوجوان فوٹوگرافر کا کردار ادا کر رہا تھا جو ان کی محبت میں گرفتار ہو جاتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق اداکارہ نے لکھا ہے کہ ایک دن وہ ڈرامے میں اپنے کرداروں اور ان کے تعلقات سے متعلق بات کر رہے تھے کہ انہوں نے حقیقت میں بھی ایک دوسرے سے رومانوی تعلقات استوار کر لیے۔ رپورٹ سے پتہ چلتا ہے کہ ڈیمی مور نے اپنی کتاب میں دعویٰ کیا کہ وہ پہلی خاتون تھیں جنہوں نے جان کرائر کے ساتھ مباشرت کی۔ تاہم رپورٹ سامنے آنے کے بعد جان کرائر نے اداکارہ کے دعوے کو مسترد کر دیا۔

امریکی نشریاتی ادارے سی این این نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ جان کرائر نے ایک ٹوئٹ کے ذریعے اداکارہ کے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ وہ ہائی اسکول میں تعلیم کے دوران ہی مخالف جنس سے مباشرت کر چکے تھے۔

جان کرائر نے ڈیمی مور کے دعوے پر حیرانی کا اظہار کرتے ہوئے اعتراف کیا کہ ان کے اور اداکارہ کے درمیان جو کچھ بھی ہوا، اس پر وہ پشیمان نہیں ہیں، تاہم اداکارہ کا یہ دعویٰ کہ وہ پہلی خاتون ہیں جن سے ان کے تعلقات قائم ہوئے وہ غلط ہے۔

خیال رہے کہ ڈیمی مور کی کتاب میں اس کے علاوہ بھی کئی متنازع دعوے کیے گئے ہیں اور امریکی و برطانوی میڈیا میں اداکارہ کی ذاتی زندگی کا ایک نیا پنڈورا باکس کھل گیا ہے۔ اداکارہ کی کتاب پر متعدد نشریاتی اداروں اور شوبز ویب سائٹس نے متعدد متنازع رپورٹس شائع کی ہیں اور بتایا ہے کہ اداکارہ نے کس طرح کے عجیب دعوے کیے ہیں۔

اداکارہ نے اپنی کتاب میں اپنی شادیوں، والدین کے ساتھ گزاری گئی زندگی، افیئرز اور اسکینڈلز سمیت اپنے کریئر کے حوالے سے بھی کھل کر بات کی ہے۔ انہوں نے اپنی کتاب میں آخری شوہر خود سے 15 برس کم عمر ایشٹن کچر کے حوالے سے بھی کئی دعوے کیے ہیں۔

واضح رہے کہ ڈیمی مور نے تین شادیاں کیں اور انہیں دوسرے شوہر سے تین بیٹیاں تھیں، جن سے سے ان کی طلاق 2000ء میں ہوگئی تھی۔ اداکارہ نے آخری شادی 2005ء میں خود سے 15 برس کم عمر اداکارہ ایشٹن کچر سے کی، تاہم ان کی یہ شادی بھی چند سال بعد طلاق پر ختم ہوئی۔ ڈیمی مور کے دیگر اداکاروں، موسیقار و صنعت کاروں سے بھی تعلقات رہے اور وہ اپنے زمانے کی مشہور و مقبول ترین اداکارہ رہی ہیں۔

خیال رہے کہ ڈیمی مور 1996ء میں ہولی وڈ کی سب سے زیادہ کمانے والی اداکارہ بنی تھیں، اس وقت ان کی سالانہ کمائی سوا کروڑ ڈالر تھی۔ انہوں نے محض 17 برس کی عمر میں بطور ماڈلنگ کریئر کا آغاز کیا اور وہ ابتدائی طور پر انتہائی بولڈ انداز میں تصاویری ماڈلنگ کرتی تھیں۔ ڈیمی مور کو 1985ء سے 1995ء کی سب سے مقبول، بااثر اور سب سے زیادہ معاوضہ لینے والی اداکارہ مانا جاتا ہے، انہوں نے 5 درجن سے زائد فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔

Facebook Comments