معروف بولی ووڈ شخصیت نے مودی سرکار کے خلاف علم بغاوت بلند کر دیا

Anurag Kashyap
11جنوری2020
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (ممبئی) بولی ووڈ کے مشہور ہدایت کار و فلمساز انوراگ کشپ نے مودی سرکار کے جارحانہ اقدام کے خلاف اپنا احتجاج ریکارڈ کروایا ہے۔

تفصیلات کے مطابق فلمساز و ہدایتکار انوراگ کشپ نے نظم پڑھ کر مودی سرکار کے جارحانہ اقدام کے خلاف منفرد انداز میں اپنا احتجاج ریکارڈ کروایا۔ ادھر بی جے پی کے سابق لیڈر یشونت سنہا نے متنازع قانون کی منسوخی کیلئے ممبئی سے دہلی تک 3 ہزار کلومیٹر طویل مارچ کا آغاز کر دیا ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ بولی ووڈ اداکار جاوید جعفری کی شعلہ بیانی سے مودی سرکار کے پرخچے اڑ گئے

واضح رہے کہ بھارت کی اندرونی صورتحال اس وقت انتہائی کشیدہ ہے اور بھارت سخت احتجاجی تحاریک کی لپیٹ میں ہے۔ مودی سرکارکی جانب سے مسلمانوں کے خلاف بھارت میں نافذ کیے گئے شہریت کے متنازع قانون اور جواہر لعل نہرو یونیورسٹی میں طلبا پر آر ایس ایس کے غنڈوں کے حملے کیخلاف احتجاج جاری ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ بھارت میں پولیس والوں نے مسلمانوں کے گھروں میں گھسنا شروع کر دیا، بھارتی مصنفہ اروندھتی رائے

ایسے میں بولی ووڈ کی مشہور ہستیاں بھی مودی سرکار کے ان نفرت انگیز اقدامات کے خلاف اٹھ کھڑی ہوئی ہیں۔ مودی سرکار کی انتہا پسندانہ پالیسیوں کے خلاف بھارت میں ہر طرف ریلیاں، مظاہرے اور احتجاج ہی احتجاج نظرآ رہا ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ سوناکشی سنہا بھارت میں بڑھتی ہوئی انتہا پسندی کیخلاف کھل کر سامنے آ گئیں

نئی دہلی کی جواہر لعل یونیورسٹی میں انتہاپسند ہندو تنظیم آر ایس ایس کے حملے کو 4 روزگزرنے کے باوجود کسی ملزم کی گرفتاری نہ ہونے پر طلبہ سراپا احتجاج ہیں۔ مختلف یونیورسٹیوں کے طلباء نے اہم شاہراہوں پر دھرنا دیا اور تشدد کا نشانہ بننے والے ساتھیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے شمعیں روشن کیں۔

Facebook Comments