رادھیکا آپٹے کو فلم ’’وکی ڈونر‘‘ سے کیوں نکال دیا گیا؟ اداکارہ نے اہم وجہ بتا دی

Why Radhika Apte Was Kicked Out From Film Vicky Donor
28جون2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (ممبئی) بولی ووڈ اداکارائیں اکثر و بیشتر ان تمام مسائل پر کھل کر بات کرتی نظر آتی ہیں جن کا سامنا انہیں سالوں سے ہندی سینما انڈسٹری میں کرنا پڑ رہا ہے۔

ان میں اداکاروں سے کم معاوضہ ملنا، بڑھتی عمر کے ساتھ ان کیلئے کرداروں کا کم ہو جانا اور سب سے اہم باڈی شیمنگ یعنی ظاہری شخصیت کو تنقید کا نشانہ بنانا ہے۔

کئی اداکاراؤں کو اپنے انداز، اپنے لہجے اور اپنی جسامت کے باعث متعدد کامیاب فلموں سے ہاتھ بھی دھونا پڑا اور ایسی ہی ایک اداکارہ رادھیکا آپٹے بھی ہیں، جنہوں نے ایک انٹرویو میں انکشاف کیا کہ انہیں بولی ووڈ کی ایک بڑی فلم سے باہر نکال دیا گیا تھا، جس کی وجہ ان کا وزن تھا۔

رادھیکا اپنے قریبی دوست اداکار آیوشمان کھرانہ کے ہمراہ ایک شو کا حصہ بنیں، جہاں انہوں نے بتایا کہ وہ آیوشمان کے ساتھ ان کی ایک اور فلم میں کام کرنے والی تھی تاہم ایسا ہو نہیں پایا۔ رادھیکا آپٹے اور آیوشمان کھرانہ نے ایک ساتھ گآشتہ سال کی کامیاب فلم ‘اندھادھن’ میں کام کیا تھا۔

اداکارہ نے بتایا کہ وہ آیوشمان کی کامیاب فلم ‘وکی ڈونر’ میں بھی ان کے ساتھ کام کرنے والی تھیں تاہم وزن زیادہ ہونے کی وجہ سے انہیں فلم سے نکال دیا گیا۔

رادھیکا کا کہنا تھا کہ ‘میں فلم کی شوٹنگ سے قبل چھٹیاں منانے باہر گئی تھی، جہاں میں نے اس بات کا خیال نہیں رکھا کہ مجھے ایسا کچھ نہیں کھانا پینا جس سے میرا وزن بڑھے، میں نے فلم کی ٹیم کو اعتماد میں لینے کی کوشش کی کہ واپس آ کر میں اپنا وزن کم کر لوں گی، تاہم انہوں نے انکار کرتے ہوئے مجھے فلم سے باہر کر دیا’۔ اداکارہ کے مطابق انہیں فلم سے باہر نکالے جانے کے افسوس سے زیادہ پریشان بڑھے ہوئے وزن نے کیا، کیونکہ ایک بار فلم سے نکالنے پر وہ اتنا خوفزدہ ہوگئیں کہ پھر انہوں نے اپنی ڈائیٹ کا خیال رکھا۔

یاد رہے کہ 2012ء کی اس مشہور فلم ‘وکی ڈونر’ میں آیوشمان کے ہمراہ یامی گوتم کو کاسٹ کیا گیا تھا۔

Facebook Comments