عظمیٰ بخاری نے بھارتی فوجیوں کو شہید قرار دے دیا! پاکستانیوں کا سخت ردعمل

Uzma Bukhari
02نومبر2020
(فوٹو : فائل)

ویب ڈیسک: (اسلام آباد) مسلم لیگ ن کی رہنما عظمیٰ بخاری نے پلوامہ حملے میں ہلاک ہونے والے بھارتی فوجیوں کو شہید قرار دے دیا، سیاستدانوں اور سوشل میڈیا صارفین کا سخت ردعمل سامنے آ گیا، نئی بحث چھڑ گئی۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کی رہنما عظمیٰ بخاری کا کہنا ہے کہ پلوامہ حملے میں 40 بھارتی فوجی شہید ہوئے، ان کا کہنا تھا کہ پلوامہ واقعے کو ایک وفاقی وزیر نے اپنے حصے میں ڈال دیا۔

عظمیٰ بخاری کے بیان کی ویڈیو اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر شیئر کرتے ہوئے وفاقی وزیر فواد چوہدری نے عنوان میں ملکہ جذبات لکھ دیا۔

وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی نے بھی ردعمل دیتے ہوئے لکھا کہ عظمیٰ بخاری کو کوئی شہادت کا مطلب اور شہید کا مقام سمجھائے۔

عظمیٰ بخاری کے بیان پر سوشل میڈیا میں زبردست بحث جاری ہے اور صارفین اپنے اپنے خیالات کا اظہار کر رہے ہیں۔

تجزیہ کار اعجاز اعوان اے آر وائی نیوز سے گفتگو میں کہا کہ یہ لوگ صرف نواز شریف کی بے گناہی ثابت کرنے کیلئے اس طرح کی باتیں کر رہے ہیں کل یہ کہہ دیں گے کہ زبان پھسل گئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ ان لوگوں کو چاہیئے کہ یہ اپنی زبان بند رکھیں تو زیادہ بہتر ہے۔

یاد رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ایک قافلے کو نشانہ بنایا گیا تھا، جس میں 46 فوجی ہلاک ہو ئے تھے جس کے بعد بھارت نے واویلا مچاتے ہوئے پاکستان پر الزام عائد کر دیا تھا۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ عظمیٰ بخاری نے نواز شریف کی بھولی صورت کے پیچھے چھپی حقیقت کو عیاں کر دیا

بعد ازاں بھارتی فوج نے ضلع پلوامہ میں آپریشن کے نام پر بربریت کا مظاہرہ کرتے ہوئے گیارہ کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا تھا جبکہ مسلمانوں کی املاک کو بھی نذر آتش کیا گیا تھا۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ عمر تنویر بٹ نے عظمٰی بخاری کا منہ آٹے سے بند کر دیا! اب روٹیاں پکا کر پٹواریوں کو کھلاؤ

پاکستان کا کہنا تھا کہ بھارت کے پاس پلوامہ حملے سے متعلق کسی قسم کے کوئی شواہد ہیں تو پاکستان تعاون کیلئے تیار ہے لیکن مودی سرکار نے الزام لگانے کے علاوہ پاکستان سے کوئی تعاون نہیں کیا تھا۔

Facebook Comments