وزیر خارجہ کا سلامتی کونسل کو خط! اجلاس بلانے کی درخواست

Shah Mehmood Qureshi
05اگست2020
(فوٹو : فائل)

ویب ڈیسک: (اسلام آباد) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارت کے غیر قانونی اور یکطرفہ اقدامات کا ایک سال مکمل ہونے پر ایک بار پھر سلامتی کونسل سے اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق وزیر خارجہ نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے صدر کو خط ارسال کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی فوجی محاصرے کے نتائج اور بھارت کے جارحانہ عزائم سے جنوبی ایشیا میں امن و سلامتی کو درپیش سنگین خطرات پر غور کیلئے کونسل کا اجلاس طلب کیا جائے۔

وزیر خارجہ نے اپنے خط میں مقبوضہ کشمیر میں فوجی محاصرے، انٹرنیٹ اور مواصلات پر پابندی، کشمیری سیاسی رہنماؤں کی نظر بندی اور کشمیری نوجوانوں کی جبری گمشدگی اور تشدد، ماورائے عدالت قتل و غارت گری اور کشمیریوں پر اجتماعی سزا کے نفاذ سے متعلق تفصیلی معلومات فراہم کی ہیں۔

پاکستان نے سلامتی کونسل کو سرکاری دستاویزات کے طور پر دو پیپرز بھی فرام کیے ہیں جن میں سے ایک جموں و کشمیر تنازع کے قانونی پہلوؤں جبکہ دوسرا مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کے بارے میں ہے۔

قانونی دستاویز میں کونسل کے اراکین اور عالمی برادری کو کشمیریوں کے قانونی حق خود ارادیت کے مطالبے سے آگاہ کیا گیا ہے۔ اسی طرح انسانی حقوق کی پامالیوں سے متعلق دستاویز کشمیری عوام کے خلاف ظلم اور سنگین جرائم سے متعلق بھارتی مظالم کا ثبوت ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق شاہ محمود نے خط میں اس بات پر زور دیا ہے کہ بھارت کی جانب سے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے ساتھ جنگ بندی کی شدید خلاف ورزیوں میں اصافہ ہو رہا ہے اور پاکستان کے خلاف بھات کے جارحانہ عزائم امن و سلامتی کیلئے خطرہ ہیں۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا بھارت کو کھلا چیلنج

وزیر خارجہ نے کونسل پر زور دیا ہے کہ وہ بھارت اور پاکستان میں اقوام متحدہ کے فوجی مبصر گروپ کو مضبوط بنائے تاکہ وہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں سلامتی کے حوالے سے مکمل اور درست رپورٹ کرنے کے قابل ہو۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ بھارت بیگناہ کشمیریوں کو خوراک اور ادویات کی فراہمی یقینی بنائے، شاہ محمود قریشی

سلامتی کونسل کو بین الاقوامی امن و سلامتی کی بحالی کیلئے اپنی بنیادی ذمہ داری کی یاد دہانی کراتے ہوئے وزیر خارجہ نے کونسل سے مطالبہ کیا ہے کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارت کے فوجی محاصرے کے نتائج اور بھارت کے جارحانہ عزائم سے جنوبی ایشیا میں امن و سلامتی کو درپیش سنگین خطرات پر غور کیلئے اجلاس طلب کیا جائے۔

Facebook Comments