کراچی میں ڈکیتی کے واقعات بدستور جاری! شہری پریشان

Robbery
02جولائی2020
(فوٹو : فائل)

ویب ڈیسک: (کراچی) شہر قائد میں ڈکیتی کی وارداتیں مسلسل جاری ہیں، ایک ہی دن میں تین مقامات پر ڈاکوؤں نے شہریوں سے طلائی زیورات، نقدی اور موبائل فون چھین لیے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق کراچی کے علاقے گلستان جوہر بلاک تھری کے بنگلے میں لوٹ مار کی وارادات ہوئی، ڈاکو 35 لاکھ کا سونا اور دو لاکھ روپے نقد لے کر فرار ہو گئے، چھ ڈاکو گاڑی اور دو موٹر سائیکلوں پر واردات کے لیے آئے تھے۔

ادھر کورنگی انڈسٹریل ایریا میں نقب زنی کی واردات ہوئی، ڈاکو گلزار کالونی ایف مارکیٹ کے تالے کاٹ کر سامان لے اڑے۔

دوسری جانب نارتھ کراچی میں ملزمان نے جدید اسلحہ کے زور پر لوٹ مار کی، 4 ملزمان میڈیکل اسٹور سے موبائل فون، نقد رقم لوٹ کر باآسانی فرار ہو گئے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ آن لائن شو کے دوران مسلح افراد کی ڈکیتی کی واردات! ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی

ذرائع کے مطابق ملزمان نے اسٹور میں موجود افراد کو تشدد کا نشانہ بھی بنایا، ملزمان نے شناخت چھپانے کیلئے ماسک پہنا ہوا تھا۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ امریکی بینک لوٹنے والے پاکستانی لاہور سے گرفتار

واضح رہے کہ کراچی میں لاک ڈاؤن کے باوجود چوری و ڈکیتی کی وارداتیں روز کا معمول بن گئی ہیں، پولیس ملزمان کو تاحال گرفتار کرنے میں ناکام رہی ہے، اس سے قبل گلشن اقبال مسکن چورنگی کے قریب بھی ڈکیتی مزاحمت پر ایک شخص کو قتل کر دیا گیا تھا۔

Facebook Comments