جعلی ڈگریوں کا معاملہ! پی آئی اے نے تگڑا ایکشن شروع کر دیا

PIA
02جولائی2020
(فوٹو : فائل)

ویب ڈیسک: (کراچی) قومی ايئر لائن پی آئی اے ميں جعلی ڈگری رکھنے والے ملازمین کيخلاف کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے، اسسٹنٹ مینیجر فلائٹ سروس کو انتظامیہ نے برطرفی کا پروانہ تھما دیا۔

تفصیلات کے مطابق پی آئی اے میں جعلی ڈگریوں کے حامل ملازمین کے خلاف گھیرا تنگ کر دیا گیا، جعلی ڈگریاں رکھنے والے ملازمین کی ملازمت سے برطرفی کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ تحقیقات کے دوران پی آئی اے کے ملازم اسسٹنٹ مینیجر فلائٹ سروس خالد محمود جدون کی بی اے کی ڈگری جعلی نکلی تھی پی آئی اے انتظامیہ نے جعلی ڈگری کے باعث اسے نوکری سے فارغ کرتے ہوئے نوٹیفیکیشن بھی جاری کر دیا۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ جعلی ڈگری والوں کو طیارے اڑانے سے روک دیا گیا! وزیر ہوابازی غلام سرور خان

پی آئی اے انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ڈگریوں کی جانچ پڑتال کے دوران اسسٹنٹ مینیجر فلائٹ سروس خالد محمود جدون نے انکوائری میں تسلی بخش جواب نہیں دیا تھا جس پر فوری ایکشن لیا گیا۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ یورپی یونین نے پی آئی اے پروازوں پر پابندی لگا دی

خیال رہے کہ پی آئی اے نے جعلی ڈگری کے حامل 150 پائلٹس کے نام سول ایوی ایشن سے مانگ لیے ہیں اور فوری طور پر گراؤنڈ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ پی آئی اے کی تاریخ کا ہلا کر رکھ دینے والا واقعہ! بڑے بڑے سوالات اٹھ گئے

پی آئی اے کے ترجمان کا کہنا تھا کہ پی آئی اے آپریشن بند کر دے گی لیکن ان پائلٹس کو جہاز نہیں اڑانے دے گی تاہم دیگر ایئرلائنز نے ابھی تک اس قسم کا اعلان نہیں کیا۔

Facebook Comments