سعودی جیلوں میں قید پاکستانی گھروں کو لوٹنے لگے

Prison
02اگست2021
(فوٹو : اسٹاک امیج)

ویب ڈیسک: (کراچی) وزیر اعظم عمران خان کی سعودی عرب کے ساتھ اچھی سفارت کاری کی بدولت سعودی جیلوں میں قید پاکستانیوں کی رہائی کا عمل شروع کر دیا گیا، کل 18 پاکستانی قیدی اپنے ملک واپس آ جائیں گے۔

اس حوالے سے تفصیلات کچھ اس طرح ہیں کہ وزیر اعظم عمران خان کی سعودی حکومت کے ساتھ بات چیت کے اچھے نتائج سامنے آ رہے ہیں، جس کی بدولت سعودی جیلوں میں قید پاکستانیوں کی سزا میں کمی کی جا رہی ہے اور انکو واپس پاکستان بھیجا جا رہا ہے۔

ذرائع کے مطابق کل 18 قیدی لاہور پہنچیں گے اور باقی کے تمام تر کاغذی کارروائی کے بعد پی آئی اے کی پرواز کے ذریعے پاکستان پہنچ جائیں گے۔

اطلاعات کے مطابق کل پاکستان پہنچنے پر قیدیوں کے کورونا ٹیسٹ کیے جائیں گے اور گھروں میں جانے کا بندوبست کیا جائے گا، واضح رہے کہ اس سے پہلے65 قیدی 20 جولائی کو اسلام آباد پہنچ گئے تھے۔

یاد رہے کہ گذشتہ ماہ وزارت داخلہ نے وزیر اعظم عمران خان کے کامیاب دورے کے بعد سعودی عرب سے وطن واپس پہنچنے والے قیدیوں کی تفیصلات جاری کی تھی۔

وزارت داخلہ کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ سعودی عرب سے 1100 قیدیوں کو پاکستان بھیجا گیا اور اب انہیں جیلوں میں منتقل کیا جائے گا۔

وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا کہ منشیات میں ملوث 22 اور قتل میں ملوث 8 قیدیوں کو وطن واپس نہی لایا جا سکا۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم سے ایک ارب روپے کے فنڈز کی درخواست کی ہے اور اگر یہ رقم مل گئی تو 2005 سے معمولی جرائم میں ملوث سعودی جیلوں میں قید سینکڑوں پاکستانیوں کے جرمانے ادا کیےجائیں گے جس سے انہیں رہائی مل سکتی ہے۔

Facebook Comments