میاں ‌صاحب کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان لاہور پہنچ گئے

Nawaz Sharif's personal physician Dr. Adnan reached Lahore
31مئی2020
فوٹو اے آر وائی نیوز

ویب ڈیسک: (لاہور) میاں نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان اور کیپٹن صفدر کی بیٹی لاہور پہنچ گئے ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق نواز شریف کے ذاتی معالج اور کیپٹن صفدر کی بیٹی لندن سے پی آئی اے کی پرواز کے ذریعے لاہور پہنچ گئے۔

لاہور پہنچنے پر ڈاکٹر عدنان اور مریم نواز کی بیٹی کو ہوٹل منتقل کر دیا گیا، لندن سے روانہ ہوتے وقت ڈاکٹر عدنان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ عارضی طور پر پاکستان جا رہے ہیں، جلد واپس آئیں گے۔

ڈاکٹر عدنان نے میاں نواز شریف کی صحت سے متعلق کچھ بتانے سے گریز کیا۔ خیال رہے کہ ڈاکٹر عدنان تقریباً 6 ماہ لندن قیام کے بعد واپس پاکستان پہنچے ہیں، ان کے ہمراہ کیپٹن صفدر کی صاحبزادی بھی پاکستان آئیں ہیں۔

ادھر گزشتہ رات ن لیگی رہنما مصدق ملک نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام سوال یہ ہے میں گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ نواز شریف کو ان کے ڈاکٹر نے ابھی سرجری سے منع کیا ہوا ہے، جیسے ہی ان کی سرجری ہو گی وہ واپس آ جائیں گے، پی ٹی آئی حکومت نواز شریف کے واپس آنے سے خوف زدہ ہے۔

پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر سائنس فواد چوہدری نے کہا نواز شریف سے متعلق جعلی رپورٹیں دے کر بے وقوف بنایا گیا، نواز شریف اب تو تصویر میں ٹھیک نظر آ رہے ہیں، انھیں واپس آ جانا چاہیے، ان کے اور قائد ایم کیو ایم لندن کی صورت حال ایک جیسی ہی ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز سابق وزیر اعظم نواز شریف کی کورونا لاک ڈاؤن کے دوران اہل خانہ کے ہم راہ نئی تصاویر منظر عام پر آ گئی تھیں، جن میں نواز شریف کو ہائیڈ پارک پلیس کے سامنے دفتر کے عقبی حصے میں بیٹھ کر چائے پیتے دیکھا گیا۔

Facebook Comments