رواں سال حج سے متعلق حتمی فیصلے کی تاریخ سامنے آ گئی

Hajj
02جون2020
(فوٹو : فائل)

ویب ڈیسک: (اسلام آباد) رواں سال حج سے متعلق فیصلہ 15جون تک متوقع ہے، حج کے حوالے سے تجاویز پرغور جاری ہے، جس میں حج کوٹہ 80 فیصد کم ہونے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق رواں سال حج کوٹہ 80 فیصد کم ہونے کا امکان ہے، حج سے متعلق سعودی حکومت کا مختلف تجاویزپرغور جاری ہے تاہم سعودی عرب حتمی پالیسی کے اجرا سے قبل مسلم ممالک سے مشاورت کرے گا۔

وزارتِ مذہبی امور کے ذرائع کا کہنا ہے کہ رواں سال حج سے متعلق فیصلہ 15 جون تک متوقع ہے، حج کے حوالے سے زیرِ غور تجاویز میں تمام بڑے ممالک کا 80 فیصد کوٹہ ختم کرنا شامل ہیں۔

ذرائع کے مطابق تمام ممالک سے صرف وفود کو حج کی دعوت دینے اور حج کی سعادت صرف سعودی عرب میں رہنے والوں کو دینے کی تجاوز بھی زیرِ غور ہیں۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ کیا اس سال سعودی حکومت کورونا وائرس کی وجہ سے حج منسوخ کر سکتی ہے؟

یاد رہے کہ سعودی وزارت حج وعمرہ ڈاکٹر محمد صالح بن طاہر بنتن نے کہا تھا کہ سعودی وزارت حاجیوں کی خدمات کیلئے پرعزم ہیں اور حاجیوں کی حفاظت، سہولتوں کی فراہمی ترجیحات میں شامل ہیں۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ وزیراعظم عمران خان نے حج اخراجات میں مزید کمی لانے کی ہدایات کر دیں

ڈاکٹر محمد صالح بن طاہر بنتن کا کہنا تھا کہ ہماری درخواست ہے کہ اس سال حج سے متعلق کوئی بھی نیا معاہدہ نہ کیا جائے، معاہدے اس وقت تک نہ کئے جائیں جب تک کورونا وبا کی صورتحال واضح نہ ہو، سعودی حکومت کورونا وائرس پر مسلسل نظر رکھے ہوئے ہیں۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ حکومت کا حجاج کرام کو رقم واپس دینے کا اعلان

سعودی وزیرمذہبی امور نے کہا تھا کہ سعودی حکومت حج کو یقینی بنانے کیلئے کوشاں ہے اور اس بات کا بھی پورا دھیان رکھا جائے گا کہ کوئی نقصان نہ ہو، حج میں عوام کے اجتماع سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا خدشہ ہے، وائرس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے اعلیٰ احتیاطی تدابیر اپنائی جا سکتی ہیں۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ عازمین حج کی معاونت کیلئے پاک حج معاون نامی موبائل ایپلیکیشن متعارف کرا دی گئی

خیال رہے کہ سعودی عرب نے پاکستان کو حج معاہدوں سے روک دیا تھا، سعودی حکومت کی جانب سے مراسلے میں کہا گیا تھا کہ کورونا وائرس کے خدشات کے پیش نظر حج معاہدہ نہ کریں، سعودی حکومت صورت حال پر نظر رکھے ہوئے ہے، صورتحال بہتر ہوتے ہی آگاہ کریں گے۔

Facebook Comments