کیا شہباز شریف نئے آرمی چیف کی تعیناتی کرپائیں گے؟ سہیل وڑائچ نے بڑا دعویٰ کردیا

Sohail Warraich
28اپریل2022
( فوٹو: فائل )

ویب ڈیسک: ( لاہور ) سینئر تجزیہ کار سہیل وڑائچ  کا کہنا ہے کہ جو بھی وزیراعظم ہو گا وہ نئے آرمی چیف کی تعیناتی کرے گا،پھر چاہے وہ موجودہ وزیراعظم شہباز شریف ہوں یا عمران خان ہوں۔ انہوں نے امکان ظاہر کیا کہ شہباز شریف ہی نئے آرمی چیف کی تعیناتی کریں گے کیونکہ نئے آرمی چیف کی تعیناتی سے پہلے الیکشن ہوتے ہوئے نظر نہیں آرہے۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میرے خیال میں مصطفیٰ نواز کھوکھر درست بات کررہے ہیں۔کیونکہ جو بھی وزیراعظم ہو گا وہی فیصلہ کرے گا،کیونکہ اگر اس وقت تک الیکشن نہیں ہوتے تو شہباز شریف ہی نئے آرمی چیف کی تعیناتی کریں گے اور اگر الیکشن ہو جاتے ہیں تو نئے منتخب وزیراعظم نئے آرمی چیف کی تعیناتی کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس وقت جو صورتحال مجھے لگ رہی ہے وہ یہ ہے کہ نئے آرمی چیف کی تعیناتی تک  الیکشن نہیں ہو ئے ہوں گے، تعیناتی کے بعد شائد الیکشن ہوں۔اس کا مطلب ہے کہ اسی وزیراعظم کو یہ فیصلہ کرنا پڑے گا،اور اس کو حق بھی حاصل ہے کیونکہ  اس وزیراعظم کو بھی اسمبلی نے منتخب کیا ہے،اسی  طرح الیکشن کا طریقہ کار ہوتاہے،وہی منتخب نمائندے ہیں،انہی  کے ذریعے ہی وہ وزیراعظم منتخب ہوئے تو یہ کسی طرح دوسروں سےکم تر وزیراعظم نہیں ہیں۔

Facebook Comments