حکومت مخالف تحریک کو مضبوط کرنے کیلئے بلاول بھٹو اور شہباز شریف کی مشاورت

Bilawal Bhutto Shehbaz Sharif
04ستمبر2021
(فوٹو : فائل)

ویب ڈیسک: (لاہور) آئندہ ایک دوسرے پر لفظی گولہ باری نہیں کریں گے! پی پی چیئرمین اور مسلم لیگ ن کے صدر کا نیا پینترا سامنے آ گیا۔ مسلم لیگ (ن) میں آپ کے علاوہ کسی سے کوئی بات نہیں ہو گی، بلاول بھٹو نے مریم نواز کو سائیڈ لائن کر دیا۔ بلاول بھٹو اور شہباز شریف کی ملاقات کی تفصیلات سامنے آ گئیں۔

تفصیلات کچھ اس طرح ہیں کہ اے آر وائی نیوز کو شہباز شریف اور بلاول بھٹو کے ذرائع سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق دونوں رہنماؤں کے درمیان اہم ٹیلی فونک رابطہ ہوا، جس میں جلد ملاقات پر اتفاق کیا گیا۔ دونوں رہنماؤں نے اس بات پر اتفاق کیا کہ اپوزیشن مل کر انتخابی اصلاحات اور ای سی نئے ممبرز پر لائحہ عمل بنائے گی جبکہ حکومت کے خلاف اتفاق رائے سے ساتھ چلنے کی تجویزپر بھی غور کیا گیا۔

شہباز شریف نے بلاول بھٹو کی تجاویز پر مولانا فضل الرحمان اور پی ڈی ایم میں شامل دیگر جماعتوں کے رہنماؤں سے مشاورت کا عندیہ بھی دیا۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ فیاض الحسن چوہان نے پی ڈی ایم لیڈران کی تگڑی کلاس لے لی

بلاول بھٹو اور شہباز شریف نے ایک دوسرے پر لفظی گولہ باری کم کرنے کی تجویز بھی دی، جس پر دونوں رہنماؤں نے اتفاق کیا اور آئندہ ہفتے ملاقات پر آمادگی کا اظہار کیا۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ پی ڈی ایم مراد سعید کے نشانے پر

بلاول بھٹو نے واضح مؤقف اپنایا کہ مسلم لیگ ن میں شہباز شریف کے علاوہ کسی اور رہنما سے کوئی بات نہیں ہو گی۔

Facebook Comments