نیب کی بڑی وصولی! جعلی اکاؤنٹس کیس میں ملزمان اربوں روپے واپس کرنے پر راضی ہو گئے

05ستمبر2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (اسلام آباد): جعلی اکاؤنٹس کیس کے ملزمان عبدالغنی مجید اور دیگر 7 ملزمان نے پلی بارگین کی درخواست جمع کرا دی، جس کے مطابق وہ 10 ارب 66 کروڑ روپے اور 266 ایکڑ سے زائد کی اراضی واپس کریں گے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق جعلی اکاؤنٹس کیس میں گرفتار 7 ملزمان نے آخرکار پلی بارگین کرتے ہوئے 10 ارب 66 کروڑ روپے واپس کرنے کیلئے درخواست دے دی ہے۔ ملزمان میں عبدالغنی مجید سمیت 7 دیگر شامل ہیں، ملزمان نے سندھ اور اسٹیل ملز کی سرکاری زمینوں میں بھی خرد برد کی ہے، پلی بارگین کے تحت ملزمان 266 ایکڑ سے زائد اراضی بھی واپس کریں گے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ جعلی اکاؤنٹس کیس! 30 ملزمان کی طلبی! 2 کے قابلِ ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے گئے

دوسری جانب چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے ملزمان کی پلی بارگین کی درخواست منظور کر لی ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز اسلام آباد کی احتساب عدالت میں جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت کے دوران نیب وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ جعلی اکاؤنٹس کیس میں گرفتار ہونے والے 3 ملزمان رقم واپس دینے پر راضی ہوگئے ہیں۔ وکیل کا کہنا تھا کہ ملزمان خورشید جمالی، عارف اور آصف نے پلی بارگین کیلئے نیب کو درخواست جمع کرا دی ہے۔ سماعت کے موقع پر عبد الغنی مجید اور دیگر ملزمان کو پیش کیا گیا تھا، فاضل جج نے عبد الغنی مجید کی اہلیہ مناہل مجید سے متعلق استفسار کیا تو نیب کے وکیل نے بتایا کہ وہ اس وقت بیرونِ ملک ہے۔

Facebook Comments