ایمن الظواہری پر حملے میں پاکستان کی حدود استعمال نہیں ہوئی

Al zahrawi
05اگست2022
( فوٹو: فائل )

ویب ڈیسک: ( اسلام آباد ) پاکستان کے دفتر خارجہ نے واضح کیا ہے کہ القاعدہ کے سربراہ ایمن الظواہری پر افغانستان میں کیے گئے ڈرون حملے میں پاکستان کی فضائی حدود استعمال نہیں ہوئی۔

ترجمان دفتر خارجہ نے میڈیا کو دی گئی ہفتہ وار بریفنگ میں کہا کہ پاکستان کا ایمن الظواہری کی ہلاکت پر وہی موقف ہے جو ہم نے اپنے بیان میں واضح کردیا تھا، وہی ہمارا باضابطہ موقف ہے۔ ان  پر حملے کے لیے پاکستان کی فضائی حدود استعمال ہونے کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ القاعدہ ایک دہشت گرد تنظیم ہے جس کے خلاف اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے پابندیاں عائد کر رکھی ہیں، تمام ریاستیں سلامتی کونسل کی طرف سے تجویز کیے گئے اقدامات کرنے کی پابند ہیں۔ پاکستان کے کردار اور شراکت کی وجہ سے القاعدہ کے خلاف بعض قابلِ ذکر کامیابیاں حاصل ہوئیں۔

Facebook Comments