موٹر وے زیادتی کیس! ملزم عابد علی کی گرفتاری کیلئے لاکھوں کا انعام

Culprit Abid Ali
21ستمبر2020
(فوٹو : فائل)

ویب ڈیسک: (لاہور) موٹروے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد علی کی گرفتاری کیلئے پولیس نے نئے نئے طریقے اپنانا شروع کر دیئے ہیں۔ ملزم کی گرفتاری میں مدد کرنے والے کو 25 لاکھ روپے کا انعام دیا جائے گا۔

تفصیلات کچھ اس طرح ہیں کہ ملک بھر میں جنگل کی آگ کی طرح پھیلنے والے موٹروے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد علی کی گرفتاری فی الوقت نہیں ہو سکی، پولیس اس خطرناک اور پیشہ ور ملزم کی گرفتاری میں جگہ جگہ چھاپے مار رہی ہے لیکن ابھی تک ملزم کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی جا سکی۔

اب پولیس نے ملزم عابد علی کو گرفتار کرنے کیلئے ایک نیا ہتھکنڈہ آزمانے کا پروگرام بنا لیا ہے، ملزم کی تصویر کے ساتھ ایک پمفلٹ تیار کیا گیا ہے جسے عوام میں تقسیم کیا جائے گا، اور ملزم کو گرفتار کروانے والے شخص کو 25 لاکھ روپے کا انعام بھی دیا جائے گا۔

پولیس نے عابد علی کے 2 متوقع حلیہ جات کی تصاویر پمفلٹ پر لگا دیں ہیں اور گرفتاری کی اطلاع کیلئے 2 موبائل نمبرز بھی جاری کئے ہیں، ایس پی سی آئی اے لاہورعاصم افتخار اور ڈی ایس پی حسنین حیدر کے نمبر درج ہے۔

دوسری جانب ملزم کی گرفتاری سے آگاہی کی ویڈیو جاری کی گئی ہے، مراسلے میں کہا گیا ہے کہ ملزم درباروں، مزاروں، مساجد، امام بارگاہوں میں روپوش ہو سکتا ہے، ملزم کو عرس، سرکس سمیت دیگر عوامی مقامات پر تلاش کیا جائے۔

مراسلے کے مطابق ڈسٹرکٹ سیکیورٹی برانچز ملزم کی گرفتاری کیلئے خصوصی نظر رکھے اور ملزم کے حوالے سے ویڈیو کلپ کیبلز پر بھی نشر کی جائے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ موٹر وے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد علی کے پانچ رشتےدار گرفتار

آئی جی پنجاب انعام غنی نے کہا ہے کہ ملزم کو گرفتار کرانے والے کی شناخت راز میں رکھی جائےگی، گرفتاری میں مدد کرنے والوں کو انعامی رقم دی جائے گی۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ موٹروے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد علی کا کریمینل ریکارڈ سامنے آ گیا

خیال رہے کہ گرفتار شفقت علی اور دیگر ملزمان عابد کی بیوی، سالی دو قریبی عزیز، عابد کا ساتھی بالا مستری، وقارالحسن سے تفتیش جاری ہے جبکہ شفقت اعتراف جرم بھی کر چکا ہے۔

Facebook Comments