کراچی سے لاہور کے درمیان 392 کلو میٹر کا موٹر وے ٹریک مکمل ہو گیا

392km motorway track between Karachi to Lahore is complete!
08اگست2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (لاہور) کراچی لاہور موٹروے کا ایک بڑا اور اہم حصہ سکھر، ملتان موٹر وے مکمل ہوگیا ہے، جس کے بعد 6 گھنٹے کا سفر ساڑھے 3 گھنٹوں میں طے ہوا کرے گا۔

تفصیلات کچھ یوں ہیں کہ چین کے تعاون سے 392 کلو میٹر کا ٹریک تعمیر کر لیا گیا ہے، 2 ارب 89 کروڑ ڈالر کا منصوبہ مقررہ مدت سے 13 دن قبل مکمل کیا گیا ہے۔ چائنہ اسٹیٹ کنسٹرکشن انجینئرنگ کارپوریشن کا تعمیر کردہ جنوبی پنجاب اور اندرونِ سندھ کو ملانے والا یہ سب سے بڑا منصوبہ ہے۔ ہر 65 کلو میٹر کے فاصلے پر سروس ایریاز بنائے گئے ہیں، تاہم این ایچ اے کی جانب سے یہ ابھی فعال نہیں ہوئے اور نہ ہی فیول اسٹیشنز قائم کئے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ سکھر، ملتان موٹر وے پر حدِ رفتار 120 کلو میٹر فی گھنٹہ ہوگی، جس سے 392 کلو میٹر کا سفر 3 سے ساڑھے 3 گھنٹے میں مکمل ہو سکے گا، ایم فائیو موٹر وے پر جدید ترین کنٹرول روم بھی بنایا گیا ہے۔

اس منصوبے کی تعمیر میں 97 فیصد پاکستانی اور 3 فیصد چینی افرادی قوت نے حصہ لیا، چینی سفارت خانے کے ڈپٹی ہیڈ آف مشن مسٹر لی جیان ژاؤ نے میڈیا کے ہمراہ منصوبے کے مختلف حصوں کا دورہ کیا۔

ایم فائیو موٹروے منصوبہ ملتان سے شروع ہو کر شجاع آباد، جلال پور پیروالہ، اُوچ شریف، احمد پور شرقیہ اور لیاقت پور کے قریب سے ہوتا ہوا سندھ میں اوباڑو ، گھوٹکی، پنو عاقل اور سکھر میں روہڑی کے قریب اختتام پذیر ہو رہا ہے۔ ملتان سکھر موٹروے جنوبی پنجاب اور اندرونِ سندھ کے پسماندہ علاقوں کو بہتر سفری سہولتوں کی فراہمی کے ساتھ ان علاقوں کے کسانوں کی زرعی منڈیوں تک رسائی میں بھی آسانی پیدا کرے گا۔

Facebook Comments