ظالم شخص نے دو سال کی بچی کو بھی نہ بخشا

Child Abuse
17اپریل2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (اسلام آباد) وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 2 سالہ بچی کو مبینہ طور پر ریپ کا نشانہ بنا دیا گیا۔ متاثرہ بچی کی والدہ نے الزام لگایا ہے کہ ان کی بیٹی کو محلے دار نے ریپ کا نشانہ بنایا۔

تفصیلات کے مطابق متاثرہ بچی کی والدہ کا کہنا ہے کہ ان کی بیٹی پڑوس میں واقع اپنے دادا کے گھر کھیلنے کے لیے گئی تھی اور کافی دیر تک اس کے واپس نہ آنے کی وجہ سے وہ اسے تلاش کرنے مذکورہ مکان میں گئیں تو وہاں موجود نہیں تھی۔ انہوں نے مزید بتایا کہ سسرال میں بیٹی کی غیر موجودگی کے باعث اسے آس پڑوس اور محلے میں تلاش کیا گیا۔

متاثرہ بچی کی والدہ نے بتایا کہ کچھ دیر بعد ان کی بیٹی روتی ہوئی محلے کے ہی ایک مکان سے نکلی تو اس کے کپڑے خون آلود تھے۔ انہوں نے بتایا کہ متاثرہ بچی کو فوری طور پر پولی کلینک ہسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے بچی کے ریپ کی تصدیق کی۔ بعد ازاں پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کر کے ملزم کو گرفتار کر لیا، جس سے تفتیش کا عمل جاری ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز پنجاب کے شہر لیہ میں بھی وین ڈرائیور اور اس کے ساتھیوں نے مل کر انٹر میڈیٹ کی طالبہ کو ریپ کا نشانہ بنایا تھا۔

Facebook Comments