حکومت پاکستان نے جذبۂ خیر سگالی کے طور پر مزید ماہی گیروں کو بھارت کے حوالے کر دیا

14اپریل2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (کراچی) پاکستان نے جذبۂ خیر سگالی کے تحت جیلوں میں قید مزید 100 بھارتی ماہی گیروں کو رہا کردیا ہے۔

تفصیلات کچھ اس طرح ہیں کہ پاکستان نے جذبۂ خیر سگالی کے تحت پاکستانی جیلوں میں قید 100 بھارتی ماہی گیروں کو رہا کر دیا، جس کے بعد انہیں کینٹ اسٹیشن پہنچایا گیا۔ بھارتی ماہی گیروں کو سخت سیکیورٹی میں 4 کورٹس وین کےذریعے پہنچایا گیا جس کے بعد انہیں بزنس ایکسپریس کے ذریعے لاہور روانہ کیا گیا، قانونی کاروائی مکمل ہونے کے بعد تمام ماہی گیروں کو واہگہ بارڈر کے ذریعے بھارتی حکام کے حوالے کیا جائے گا۔ ریڈیو پاکستان کی رپورٹ کے مطابق رہائی پانے والے ماہی گیروں کو 16 ماہ قبل سمندری حدود کی خلاف ورزی پر گرفتار کیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ گذشتہ ہفتے حکومت پاکستان نے جذبۂ خیرسگالی کے تحت 260 بھارتی ماہی گیروں کو رہا کرنے کا فیصلہ کیا تھا جس کے تحت پہلے مرحلے میں 100 مچھیروں کو رہا کیا گیا تھا۔ رہائی پانے والے بھارتی ماہی گیر ایک بجے کراچی کینٹ اسٹیشن سے لاہور روانہ ہوئے تھے، لاہور پہنچنے کے بعد تمام لوگوں کو واہگہ بارڈر کے مقام پر گذشتہ ہفتے بھارتی حکام کے حوالے کیا گیا تھا۔

حکومت پاکستان مختلف تاریخوں میں مرحلہ وار 260 بھارتی ماہی گیروں کو رہا کرے گی، جس کے تحت اب تک 200 ماہی گیر رہا ہو چکے ہیں، جبکہ آئندہ آنے والے دنوں میں مزید کی رہائی کا امکان ہے۔

یہ بھی یاد رہے کہ سمندری حدود کی خلاف ورزی پر حراست میں لیے جانے والے قیدیوں کے ساتھ حکومت کی ہدایت پر جیل انتظامیہ اچھا برتاؤ کرتی ہے اس کے برعکس بھارتی جیلوں میں قید پاکستانیوں پر تشدد اور مظالم کے پہاڑ توڑے جاتے ہیں۔ رواں سال اب تک بھارتی جیلوں میں قید دو پاکستانیوں کو انتہا پسندوں نے تشدد کر کے شہید بھی کر دیا۔

Facebook Comments