لیہ میں درندوں نے گیارہویں جماعت کی طالبہ کی عزت کو تار تار کر دیا

14اپریل2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (لیہ) صوبہ پنجاب کے شہر لیہ میں وین ڈرائیور اور اس کے ساتھیوں نے مل کر سفاکیت اور حیوانیت کی نئی مثال قائم کرتے ہوئے گیارہویں جماعت کی طالبہ کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

تفصیلات کچھ اس طرح ہیں کہ ابراہیم نامی ڈرائیور گیارہویں جماعت کی طالبہ کو کالج چھوڑنے کے بجائے ویرانے میں لے گیا جہاں اس نے پہلے موجود اپنے ساتھیوں ندیم اور نامعلوم ملزم کے ہمراہ ہوس اور درندگی کی نئی مثال قائم کرتے ہوئے اسے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ متاثرہ لڑکی کی حالت غیر ہونے پر ملزم اسے ایک نجی ہسپتال لے گئے، تاہم وہاں موجود طبی عملے کی طرف سے علاج سے انکار پر لڑکی کو چھوڑ کر فرار ہو گئے۔ اطلاع ملنے پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر طالبہ کو تحصیل ہیڈ کوارٹرز اسپتال منتقل کر دیا۔

پولیس کے مطابق میڈیکل رپورٹ میں زیادتی کی تصدیق ہو گئی ہے۔ پولیس نے مقدمہ درج کر کے واقعے میں ملوث ایک ملزم ندیم کو گرفتار کر لیا ہے، جبکہ وین ڈرائیور ابراہیم اور دوسرے نامعلوم ملزم کی تلاش کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

Facebook Comments