بھارتی خاتون نے جرأت مندانہ فیصلہ کر کے اپنی زندگی ہی بدل ڈالی

Indian Woman Got Married With Pakistani Man
13اپریل2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (گوجرانوالہ) بھارت سے تعلق رکھنے والی ایک ہندو خاتون نے شوہر کے تشدد سے عاجز آ کر پاکستانی مرد سے شادی کر لی اور اسلام بھی قبول کر لیا، اب بھارت اس حوالے سے پاکستان کے خلاف نیا پروپیگنڈہ کر رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی شہر چندی گڑھ سے تعلق رکھنے والی ایک ہندو عورت نے اپنے شوہر کے تشدد سے تنگ آ کر ملک چھوڑ دیا اور پاکستان آ کر اسلام قبول کر کے گوجرانوالہ کے ایک شہری سلیمان سے شادی کر لی۔ دوسری طرف بھارتی دفتر خارجہ نے ہندوستانی خاتون ٹینا کو بھارت واپس بھیجنے کی درخواست کر دی ہے اور کہا ہے کہ ٹینا اپنے شوہر امیش سے ناراض ہو کر پاکستان آئی ہے۔

بھارتی دفتر خارجہ نے یہ الزام عائد کیا ہے کہ سلیمان نے اسے زبردستی اسلام قبول کروانے کے بعد یرغمال بنا رکھا ہے، جبکہ پاکستانی دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ ٹینا کو بھارتی حکام کے حوالے کرنے کی بھارتی درخواست کو مسترد کر دیا جائے گا۔

یاد رہے کہ ہندو خواتین کے قبول اسلام پر بھارت کی جانب سے ہمیشہ سے ہی یہ الزام عائد کیا جاتا ہے کہ ہندو خواتین کو زبردستی السام قبول کروایا جاتا ہے، سندھ کے علاقے گھوٹکی کی دو بہنوں کے حوالے سے بھی بھارت نے الزام لگایا کہ انھیں زبردستی اسلام قبول کرایا گیا۔

یہ بھی یاد رہے کہ گذشتہ روز گھوٹکی کی نو مسلم دونوں بہنوں نے کہا کہ ان پر کوئی دباؤ نہیں، بھارت پاکستان کے خلاف جھوٹا پروپیگنڈا کررہا ہے، نو مسلم بہنوں‌ آسیہ اور نادیہ نے کہا کہ انھیں بچپن سے مسلمان ہونے کا شوق تھا، جو اب پورا ہوا۔

Facebook Comments