خلیج فارس میں امریکا اور برطانیہ کی موجودگی عدم استحکام کا سبب ہے! ایران

19اگست2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (تہران) ایرانی پاسدارانِ انقلاب کے سربراہ جنرل علی رضا تنگسیری کا کہنا ہے کہ خلیج فارس میں امریکا اور برطانیہ عدم استحکام کا باعث ہیں،صرف ایران استحکام فراہم کر سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایرانی پاسدارانِ انقلاب کی نیوی کے سربراہ جنرل علی رضا تنگسیری نے کہا ہے کہ خلیج فارس میں امریکا اور برطانیہ کی موجودگی سارے خطے کے عدم استحکام کا باعث بنی ہوئی ہے۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اپنے ایک بیان میں تنگسیری کا مزید کہنا تھا کہ اس سارے خطے کو صرف ایران ہی دوسرے ممالک کے ساتھ اتحاد قائم کر کے استحکام فراہم کر سکتا ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ ایران کا درمیانی فاصلے تک نشانہ بنانے والے میزائل کا تجربہ: امریکا کی تصدیق

ایرانی جنرل نے اپنے بیان میں واضح کیا کہ اُن کا ملک امن اور سلامتی کا خواہش مند ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ ایرانی ڈرون مار گرانے کا دعویٰ جھوٹ کا پلندا قرار، ایران نے ویڈیو جاری کر دی

تنگسیری کا کہنا تھا کہ اگر جوہری توانائی کے حامل جنگی بحری جہاز پر حملہ کیا گیا تو خلیج کے جنوبی حصے کے ممالک کیلئے آلودگی کی وجہ سے پانی پینے کے قابل نہیں رہے گا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل ایرانی سپاہ پاسدارانِ انقلاب کے نائب سربراہ علی فدوی کا کہنا تھا کہ خطے میں امریکی جنگی بحری جہاز مکمل طور پر ایرانی فوج اور پاسدارانِ انقلاب کے کنٹرول میں ہیں۔ فدوی نے دعویٰ کیا کہ خلیج عربی میں سفر کرنے والے تمام جہازوں پر لازم ہے کہ وہ فارسی میں بات چیت کریں، اسی واسطے ہر جہاز میں فارسی مترجم موجود ہوتا ہے اور یہ ہماری طاقت کا ثبوت ہے۔

Facebook Comments