نو منتخب اسرائیلی وزیر اعظم نفتالی بینیٹ کی فلسطینیوں کو دھمکی

Naftali Bennett
22جون2021
(فوٹو : فائل)

ویب ڈیسک: (تل ابیب) نومنتخب اسرائیلی وزیر اعظم نفتالی بینیٹ بھی سابق وزیر اعظم نیتن یاہو کے نقش قدم پر چل پڑے، فلسطینیوں کو دھمکی آمیز پیغام اور نو منتخب ایرانی صدر ابراہیم رئیسی پر کڑی تنقید کرنے لگے۔

تفصیلات کچھ اس طرح ہیں کہ عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیل کے وزیر اعظم نفتالی بینیٹ نے کہا ہے کہ صبر کا پیمانہ لبریز ہو چکا اب غزہ سے مزید راکٹ فائر کرنے کو برداشت نہیں کریں گے۔

وزیر اعظم نفتالی بینیٹ نے مزید کہا کہ غزہ میں موجود دہشت گرد تنظیموں کے خلاف کارروائی جاری رکھیں گے اور کسی دباؤ میں نہیں آئیں گے تاہم غزہ کی پٹی کے رہائشیوں کے ساتھ کسی قسم کا تنازع نہیں چاہتے، جو ہم پر حملہ نہیں کرتے انہیں نقصان نہیں پہنچائیں گے۔ پہلے سیکیورٹی اجلاس کے بعد ایک بیان میں انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ ہم غزہ کی پٹی کے رہائشیوں کے ساتھ کسی تنازع میں ملوث نہیں ہونا چاہتے، جو ہم پر حملہ نہیں کرتے ہم ان کا کوئی نقصان نہیں کریں گے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ اسرائیلی پولیس افسر نے سیاہ فام لڑکے کو گولی مار دی

وزیر اعظم نفتالی بینیٹ نے اسرائیل کے دو لاپتہ فوجیوں کی بازیابی اور یہودیوں کی آباد کاری کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی اسرائیلی شہری پر حملے کو برداشت نہیں کیا جائے گا اور سخت جواب دیا جائے گا۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ اسرائیل نے بھی اپنے دوست ملک امریکہ کی جاسوسی کرنا شروع کر دی

اسرائیل کے نو منتخب وزیر اعظم نے ایران میں ابراہیم رئیسی کے نئے صدر منتخب ہونے کو دنیا کیلئے ویک اپ کال قرار دیا اور کہا کہ ایران دنیا کیلئے ایک بہت بڑا خطرہ ہے، یہ قاتلوں کی حکومت اب جوہری ہتھیار بھی بنائے گی۔

Facebook Comments