سید علی گیلانی کے اہل خانہ پر مقدمات درج

Syed Ali Geelani
05ستمبر2021
(فوٹو : فائل)

ویب ڈیسک: (سری نگر) قابض بھارتی حکومت نے سید علی گیلانی کے اہل خانہ پر مقدمات درج کر دیئے! بابائے حریت کے جنازے پر آزادی کے متوالوں نے پاکستان زندہ باد اور آزادی کے حق میں نعرے لگائے، جس پر قابض بھارتی حکومت نے حریت رہنما کے رشتے داروں اور اہل خانہ سے انتقام لینا شروع کر دیا ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کی رپورٹ کے مطابق مقبوضہ کشمیر کی کٹھ پتلی انتظامیہ نے سید علی گیلانی کے اہل خانہ اور رشتے داروں کے خلاف انتقامی کارروائی شروع کر دی ہے۔ کٹھ پتلی انتظامیہ نے جنازے میں آزادی اور پاکستان زندہ باد کے نعرے لگانے اور شرکاء کی جانب سے مرحوم کو خراج عقیدت پیش کرنے پر مقدمہ درج کر دیا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی پولیس نے ضلع بڈگام میں سید علی گیلانی کے اہل خانہ اور رشتے داروں کے خلاف درج مقدمے میں غیر قانونی سرگرمیوں کا الزام عائد کیا۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ سید علی گیلانی سپرد خاک! لاکھوں چاہنے والے نماز جنازہ میں شرکت سے محروم

سید علی گیلانی کے بیٹوں کا کہنا ہے کہ قابض فوج گھرسے زبردستی جسد خاکی لے گئے اور اہل خانہ کے بغیرتدفین کی۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے۔ پاکستان ہمارا نعرہ، مشن، راستہ اور منزل ہے، سید علی گیلانی

واضح رہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے سید علی گیلانی کی میت چھیننے اور اہل خانہ کیخلاف مقدمہ درج کرنے کی شدید مذمت کی ہے۔ وزیر اعظم نے اپنے مذمتی بیان میں کہا کہ ’ یہ شرمناک عمل بھارت میں فاشزم کی ایک اور مثال ہے، یہ نازی نظریے سے متاثر حکومت کی موجودگی کا احساس دلاتا ہے‘۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا بھارتی انتظامیہ شرم کرے، مقدمہ درج کر کے غمزدہ خاندان کو ڈرانے کی کوشش کر رہی ہے۔ وفاقی وزیر اسد عمر نے ٹوئٹ کیا علی گیلانی کے انتقال کے بعد بھی بھارتی سرکار ان کے پیغام کی اخلاقی قوت سے خوفزدہ ہے۔

Facebook Comments