ایک اور پاکستانی کی تشدد زدہ لاش رینجرز کے حوالے کر دی گئی

Murder in India
05مئی2019
(فوٹو بشکریہ گوگل)

ویب ڈیسک: (لاہور) بھارتی حکام نے انڈین جیل میں مارنے جانے والے پاکستانی ماہی گیر کی لاش واہگہ سرحد پر رینجرز کے حکام کے حوالے کر دی۔ جہاں اسے مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور وہ کچھ روز قبل دم توڑ گیا تھا۔

نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مقتول کی شناخت محمد سہیل کے نام سے ہوئی جو کراچی کے علاقے مچھر کالونی کا رہائشی تھا اور پیشے کے اعتبار سے ماہی گیر تھا۔ سہیل نے 2 سال قبل غلطی سے سرحد پار کر لی تھی اور اسے انڈین سیکیورٹی فورسز نے گرفتار کر لیا تھا۔ بعد ازاں سہیل کو جیل بھیج دیا گیا جہاں انہیں مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

پنجاب رینجرز نے مقتول کی لاش کو ایدھی فاؤنڈیشن کے حوالے کر دیا ہے تاکہ اس کے آبائی شہر منتقل کیا جا سکے۔ قبل ازیں 6 اپریل کو بھی بھارتی جیل میں تشدد کا شکار ہو کر موت کے منہ میں پہنچنے والے ایک اور پاکستانی کی میت کو وطن واپس لا کر سپرد خاک کردیا گیا تھا۔

بھارتی جیلوں میں آئے روز اس طرح کے واقعات انسانی حقوق کی تنظیموں کیلیئے لمحہ فکریہ ہیں، اس طرح کے غیر انسانی رویے پر پاکستان اور انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والی این جی اوز کو عالمی سطح پر آواز بلند کرنی چاہیے تاکہ اس طرح کے واقعات کا تدارک ہو سکے۔

Facebook Comments