پولیس جیل میں سرچ آپریشن کے دوران قیدی نے موبائل فون نگل لیا

Tihar Jail
22جنوری2022
( فوٹو: انٹرنیٹ )

ویب ڈیسک: ( نئی دہلی ) تہاڑ جیل میں جانچ کے دوران ایک قیدی نے پولیس کے ہاتھوں پکڑے جانے سے بچنے کے لیے موبائل فون کو ہی نگل لیا۔پولیس کے مطابق آپریشن کے بعد قیدی کے جسم سے موبائل فون نکال لیا گیا، اس کے پیٹ میں رکھے موبائل سے متعلق ایکسرے کی مبینہ ویڈیو بھی سامنے آئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق ڈاکٹروں نے اینڈو سکوپی کے ذریعے اس کے جسم سے موبائل فون نکالا، اب قیدی کی حالت خطرے سے باہر بتائی گئی ہے, ڈائریکٹر جنرل تہاڑ جیل کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ 5 جنوری کو پیش آیا جب جیل حکام جانچ کررہے تھے، جیسے ہی سینٹرل جیل نمبر ایک میں بند قیدی کے پاس پہنچے تو اس نے ڈر کے مارے فون نگل لیا۔

عہدیداروں کا کہنا ہے کہ قیدی کو مقامی ہسپتال منتقل کیا گیا اور بعد میں علاج کے لیے جی بی پنت ہسپتال ریفر کردیا گیا، آپریشن کے بعد موبائل فون نکال لیا گیا اور قیدی کو ہسپتال سے ڈسچارج کردیا گیا ہے۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ قیدی کی حالت اب بہتر ہے اور جیل میں اپنی سزا کاٹ رہا ہے۔

Facebook Comments