ایران میں سزائے موت کا قیدی رہائی کی خوشخبری سن کر مر گیا

Prisoner
24اپریل2022
(فوٹو: شٹر اسٹاک)

ویب ڈیسک: ( اردو گرام آنلائن ) سزائے موت کے قیدی کو 18 سال بعد رہائی کی خوشخبری ملی جس پر وہ بہت خوش ہوا کہ اسے اب سزائے موت کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا اس دوران اسے دل کا شدید دورہ پڑا اور وہ مرگیا۔

55 سالہ جنوبی ایران سے تعلق رکھنے والا شخص 18 سال سے قتل کے جرم میں سزا کاٹ رہا تھا۔ قیدی کی جانب سے مقتول کے خاندان کو کئی بار رحم کی اپیل بھیجی گئی جسے انہوں نے بلآخر معاف کردیا۔

قیدی کو یہ سن کر بہت خوشی ہوئی کہ اسے سزائے موت کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا جس کی وجہ سے اچانک اسے دل کا شدید دورہ پڑا اور اس کی موت ہو گئی۔ قیدی نے 18 سال سزائے موت کے خوف میں گزارے، حکام مقتول کے خاندان کو اسے معاف کرنے پر راضی کرنے میں کامیاب رہے لیکن وہ رہا ہونے سے پہلے ہی مرگیا۔

Facebook Comments