جنوں کا باپ کون تھا اور ان کی خوراک کیا ہوتی ہے؟ حیران کن حقائق

Jin
06اگست2022
( فوٹو: فائل )

ویب ڈیسک: ( اردو گرام آنلائن ) عام طور پر جن کو خوف کی علامت سمجھا جاتا ہے اور ان کے بارے میں ہم اتنا ہی جانتے ہیں کہ شیطان بھی ایک جن تھا اور بہت عبادت گزار تھا لیکن حضرت آدم علیہ السلام کو سجدہ نہ کرنے کے سبب اس کو قیامت تک سزا ملی اور اس نے انسان کو ورغلانے کی اجازت اللہ سے لی ہے- مگر آج ہم آپ کو جنوں کے بارے میں کچھ ایسی باتیں بتائيں گے جو قرآن و حدیث سے نہ صرف ثابت ہیں لیکن اپنی کم علمی کے سبب ہم ان کی آگاہی نہیں رکھتے ہیں-

جنات کیسے پیدا ہوئے؟

جن کے لغوی معنی چھپی ہوئی مخلوق کے ہیں۔ یہ اللہ تعالیٰ کی بنائی گئی وہ مخلوق ہے جس کو دیکھنے کی طاقت انسان کی بینائی میں نہیں ہوتی ہے۔ جنات کے پیدائش کا ذکر سورہ الرحمن میں ان الفاظ میں کیا گیا ہے کہ ‘ اور جنات کو آگ کے شعلے سے پیدا کیا گیا ہے ‘ –
حضرت ابن عباس رضی اللہ تعالیٰ سے روایت ہے کہ شیطان بھی ایک جن تھا جس کو آگ کی لو سے پیدا کیا گیا تھا ۔ جب کہ تفسیر ابن کثیر کے مطابق سب سے پہلے جن کا نام مارج تھا جس کو ابوالجن بھی کہا جاتا ہے۔ اور دنیا کے باقی تمام جن اسی کی نسل سے ہیں- لغوی اعتبار سے مارج کا مطلب آگ سے بلند ہونے والے شعلے کو کہتے ہیں۔

جنوں کی خوراک

عام طور پر ہم یہ سمجھتے ہیں کہ جن آدم خور ہوتے ہیں اور انسانوں کو کھاتے ہیں جب کہ یہ تاثر درست نہیں ہے اس حوالے سے ہمارے پاس صحیح مسلم کی ایک روایت ہے جو کہ عبداللہ بن مسعود سے روایت کی گئی ہے حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے صحابہ کرام کو جانوروں کی ہڈی اور جانوروں کی لید سے استنجا کرنے سے منع فرمایا اور فرمایا کہ یہ جنوں کی خوراک ہے اس وجہ سے انسانوں کو اس کو استعمال نہیں کرنا چاہیے-

انسان پہلے بنے یا جن؟

جیسا کہ تاریخ سے ثابت ہوا ہے کہ ابلیس جو کہ ایک جن تھا حضرت آدم علیہ السلام کی تخلیق سے پہلے نہ صرف موجود تھا بلکہ اپنی عبادت کے سبب اعلیٰ منصب پر بھی فائز تھا اس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ جن انسانوں سے پہلے موجود ہیں-

Facebook Comments