بھارت میں گدھی کا دودھ فروخت ہونے لگا، قیمت جان کر آپ کے ہوش اُڑ جائیں گے

Donkey milk began to be sold in India
17ستمبر2020
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: (نئی دہلی) بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی کی آبائی ریاست گجرات میں آج کل گدھی کے دودھ کی مانگ بہت بڑھ گئی ہے، لوگ دور دراز سے گدھی کا دودھ خریدنے کیلئے آ رہے ہیں۔

ریاست گجرات میں گدھوں کی سب سے اعلیٰ نسل ہالاری سے دودھ حاصل کیا جا رہا ہے، اس نسل کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اس کے دودھ میں بہت زیادہ صحت بخش منرلز اور کئی بیماریوں کا علاج ہے، اسی وجہ سے اس کے دودھ کی فی لٹر قیمت 15 ہزار روپے ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے: لاہور میں کتنے گدھے ہیں؟ جان کر آپ حیران رہ جائینگے

بھارتی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق ریاست گجرات میں ہالاری نسل کے گدھوں کے باقاعدہ ڈیری فارم قائم کیے گئے ہیں جہاں اس نسل کی گدھی کا دودھ فروخت کیا جاتا ہے، اس دودھ کی افادیت اور طاقت ور اجزا پر مشتمل ہونے کے سبب لوگ دور دراز علاقوں سے خریدنے آتے ہیں۔ اس دودھ کی قیمت بھی انتہائی زیادہ ہونے کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ اس کی مانگ بہت زیادہ ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے: برطانیہ میں‌ ایک بھاری بھرکم بیل نے کس طرح 800 گھروں کو بجلی سے محروم کر دیا؟

ماہرین کا کہنا ہے کہ انسانی دودھ کی طرح گدھی کے دودھ میں بھی لیکٹوز زیادہ ہے جب کہ پروٹین اور چربی کم ہے، یہی وجہ ہے کہ گدھی کے دودھ کو وہ لوگ بھی استعمال کر سکتے ہیں جنہیں گائے کے دودھ سے الرجی ہو یا کوئی دیگر مسئلہ درپیش ہو تاہم یہ دودھ جلد پھٹ جاتا ہے اور اس سے پنیر بنانا ممکن نہیں‌ ہے۔

یاد رہے کہ زیادہ تر ایشائی ممالک میں گدھوں کو وزن اُٹھانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے، تاہم چین میں دوائیاں بنانے اور فرنیچر میں گدھے کی کھالوں کا استعمال کیا جاتا ہے جب کہ یورپی ممالک میں کاسمیٹک کی اشیاء بنائی جاتی ہیں لیکن پہلی بار بھارت میں گدھی کے دودھ کے لیے ڈیری فارم بنایا گیا ہے۔

Facebook Comments