برطانیہ میں ایک رکن پارلیمنٹ چیمبر میں فحش فلم دیکھتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑا گیا

Parliament
29اپریل2022
(فوٹو: شٹر اسٹاک)

ویب ڈیسک: ( لندن ) برطانیہ میں ایک رکن پارلیمنٹ ہاﺅس آف کامنز چیمبر میں فحش فلم دیکھتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑا گیا۔

دی سن کے مطابق دو خواتین اراکین پارلیمنٹ نے اس شخص کو فحش فلم دیکھتے ہوئے پکڑا اور اس کی شکایت چیف وہپ کرس ہیٹن ہیرس سے کی۔
یہ معاملہ سامنے آنے پر 12مزید اراکین اسمبلی سامنے آگئے جن میں سابق وزیراعظم تھریسامے بھی شامل تھیں۔ انہوں نے بھی بتایا کہ وہ بھی اپنے ساتھی اراکین کو پارلیمان میں فحش فلمیں دیکھتے ہوئے پکڑ چکے ہیں۔

ان لوگوں نے پارلیمان میں اس قبیح حرکت کے بڑھتے رجحان پر شدید تحفظات کا اظہار کیا۔ ایک خاتون رکن نے روتے ہوئے چیف وہپ کہا کہ وہ اس آدمی کے خلاف انکوائری کرائیں اور اسے پارٹی سے نکال دیں۔ ترجمان چیف وہپ کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ وہ اس معاملے کو دیکھ رہے ہیں۔ اس طرح کا رویہ قطعی ناقابل قبول ہے اور ذمہ دار شخص کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ تاہم ان کی طرف سے اس رکن پارلیمنٹ کی شناخت سامنے نہیں لائی گئی۔

Facebook Comments