امریکی مہم جو نے 932 کلومیٹر کا انتہائی مشکل راستہ کتنے دنوں میں طے کیا؟

Colin OBrady-1
30دسمبر2018
(فوٹو دی گارجیئن)

ویب ڈیسک : (انٹارکٹیکا) امریکی ایتھلیٹ اور مہم جو کولن اوبریڈی نے براعظم انٹارکٹیکا کا سفر تنِ تنہا عبور کر کے ریکارڈ قائم کر دیا۔

امریکی میڈیاکے مطابق اپنے پورے سفر میں کولن اوبریڈی نے کل 932کلومیٹر کا انتہائی دشوارگزار سفر صرف 54دنوں میں طے کیا۔ اُنہوں نے اس سفر کے دوران ایک سلیج سے باندھے
ہوئے 170کلوگرام سامان کو بھی کھینچا۔

Colin OBrady 3

کولن نے بغیر سوئے مسلسل 32گھنٹے کا سفر کیا اور کل 125کلومیٹر سفر طے کیا اُنہوں نے اس سفر کو انٹارکٹیکا کی میراتھن قرار دیا۔اس سفر کو تما م کرنے کے بعد کولن نے اپنی فیملی کے نام ایک پیغام میں کہا کہ وہ یہ کا م کر چکے ہیں۔وہ ہمیشہ کمرے میں بند ہوکر اس مہم جوئی کے بارے میں سوچتے رہتے اور آخر اُنہوں نے اس کام کو کر گزرنے کی ٹھان لی۔

کولن اوبریڈی نے سخت سردی ، تنہائی ، برفانی طوفان اور دیگر مشکلا ت کا ڈٹ کر مقابلہ کیا اور سرخروہوئے۔وہ کئی بار راستہ بھٹک گئے لیکن اُنہوں نے ہمت نہ ہاری اور اپنے سامان کو کھینچتے
ہوئے 1500کلومیٹر طویل فاصلہ طے کرکے اپنی منزل پر خیروعافیت سے پہنچ گئے۔

Colin OBrady 5

کولن اوبریڈی 33سالہ ایتھلیٹ ہیں اُنہوں نے اس سفر کے دوران خاص طور پر تیار کی گئی انرجی بارز کھائیں ، جس سے وہ پورا دن 10کیلوریز پوری کیا کرتے تھے۔

کولن سے پہلے 2016میں بھی ایک مہم جو برٹن ہینری نے بھی انٹارکٹیکا کو پار کرنے کی ٹھانی مگر اپنی منزل سے صرف 30میل دور لقمۂ اجل بن گئے۔

کولن کے ایک اور ساتھی لوئی رُڈ نے بھی یہ سفر اُن کے ساتھ شروع کیا تھالیکن کولن کرسمس کے روز اپنی منزل پر پہنچ گئے تاہم لوئی رُڈ اُن سے 80کلومیٹردور تھے۔

کولن اوبریڈی کی اس کاوش کو دنیا بھرمیں پذیرائی مل رہی ہے اور لو گ اسکی ہمت کے گرویدہ ہوگئے ہیں۔

Facebook Comments