دنیا کی سب سے بڑی لائبریری کس ملک میں واقع ہے ؟

22دسمبر2018
(فوٹو فرینڈز آف لوک ڈاٹ اوآر جی)

ویب ڈیسک : دنیا کی سب سے بڑی لائبریری کا اعزاز امریکی ’’لائبریری آف کانگریس ‘‘ کو حاصل
ہے ۔ جس کا قیام امریکی صدر جا ن ایڈمز کے دورِ حکومت میں 1800ء میں عمل میں آیا۔

امریکہ میں قائم اس لائبریری کوقومی کتب خانے کا درجہ بھی حاصل ہے اوریہ سرکاری طورپر امریکی کانگریس کیلئے بھی کتب و دستاویزات وغیرہ محفوظ رکھتی ہے۔1812ء میں شروع ہونے والی ’’اینگلو امریکی جنگ‘‘ میں برطانیہ نے ’’لائبریری آف کانگریس‘‘کو تباہ کر دیاتھا، تاہم 1815ء میں تیسرے امریکی صدر تھومس جیفرسن نے دوبارہ لائبریری کی بحالی کا کام کروایااور اپنی ذاتی کلیکشن سے چھ ہزارسے زائد کتب ’’لائبریری آف کانگریس‘‘کو عطیہ کیں۔

فوٹو سرٹل ڈاٹ کام) امریکہ کے تیسرے صدر تھامس جیفرسن)
(فوٹو ٹوئٹر)

امریکی دارالحکومت واشنگٹن ڈی سی میں قائم یہ لائبریری تین عمارتوں پر مشتمل ہے ۔ جس میں مجموعی
طورپر 16کروڑ7لاکھ 75ہزار469اشیاء محفوظ ہیں، جن میں کتابو ں کے علاوہ دیگر چیزیں بھی موجود ہیں۔

انتظامیہ کے مطابق اس لائبریری میں 2کروڑ38لاکھ92ہزار68کتابیں رکھی گئی ہیں، جن میں سے 5ہزار 711کتابیں ایسی ہیں جو 15ویں صدی سے قبل شائع ہوئی تھیں۔

(فوٹو جیٹ اے اے ڈی سی ڈاٹ او آر جی)

کتابوں کے علاوہ اس لائبریری میں 1کروڑ 40لاکھ 67ہزار260رسائل ، اخبارات،پمفلٹ،تکنیکی رپورٹس، موسیقی کے کیسٹس اور دیگر اشاعتی موادبھی موجودہے۔

بارہ کروڑ 28لاکھ 10ہزار430غیر زمرہ بند (نان کلاسیفائیڈ) دستاویزات اور دیگر خصوصی مواد بھی ’’لائبریری آف کانگریس‘‘کا حصہ ہیں۔

(فوٹو دی اینچینٹڈ مینر ڈاٹ کام)

امریکی حکومت کی 10لاکھ دستاویزات ،گذشتہ تین صدیوں میں دنیا بھر میں شائع ہونے والے 10لاکھ مختلف اخبارات ، ایک لاکھ 20ہزار کامک بکس، 30لاکھ ساؤنڈ ریکارڈنگزاور1کروڑ47لاکھ تصاویر اور فن پارے اس لائبریری میں موجو دہیں۔

’’لائبریری آف کانگریس‘‘میں موجود کتابیں اور دیگر مواد انگریزی زبان کے علاوہ دنیا بھرکی 470مختلف زبانوں میں بھی محفوظ ہے۔

(فوٹو دی اینچینٹڈ مینر ڈاٹ کام)

معلومات کے اس خزانے کی دیکھ بھال کیلئے 3ہزار 224اہلکاروں پر مشتمل اسٹاف بھی ہے جو کتابوں کی دیکھ بھال کے علاوہ لائبریری کی حفاظت پر بھی مامور ہے۔

’’لائبریری آف کانگریس‘‘کے مواد کو ڈیجیٹل کئے جانے کا کام بھی جاری ہے او ر اس کام کیلئے سالانہ 80لاکھ ڈالرز کا بجٹ میں مختص کیا گیاہے۔

(فوٹو ٹوئٹر)

اب تک کی معلومات کے مطابق 1کروڑ50لاکھ سے زائد دستاویزات اور دیگر موار کو ڈیجیٹل طریقے سے محفوظ بنایا جا چکاہے۔

Facebook Comments