کیا کسی کے منہ میں 500 سے زائد دانت بھی ہو سکتے ہیں؟ حیرت انگیز کیس سامنے آ گیا

01اگست2019
(فوٹو فائل)

ویب ڈیسک: عام طور پر انسان کے منہ میں 28 سے 32 دانت ہوتے ہیں لیکن اگر کسی کے منہ میں 500 سے زائد دانت ہوں تو یہ بڑی حیرت کی بات ہے۔

بات کچھ یوں ہے کہ بھارتی ریاست چنئی میں ایک 7 سالہ بچے کے منہ سے 500 سے زائد دانتوں کو نکالا گیا ہے۔ دائیں جبڑے میں سوجن کی شکایت پر جب اس بچے کو چنئی کے شویتا ڈینٹل اینڈ ہاسپٹل میں لے جایا گیا تو ڈاکٹر معائنے کے بعد دنگ رہ گئے۔ ہسپتال کی ڈاکٹر پربتھا رامانی کا کہنا تھا کہ ہم نے کبھی کسی انسان کے منہ میں اتنے زیادہ دانت نہیں دیکھے۔

اس بچے کا ایکسرے اور سی ٹی اسکین کرایا گیا جس سے منہ کے اندر ایک تھیلی جیسے اسٹرکچر کی موجودگی کا انکشاف ہوا جس میں 526 دانت تھے۔ اس رسولی جیسی تھیلی کے نتیجے میں بچے کے داڑھوں کی نشوونما رک گئی تھی اور سینکڑوں دانت اس تھیلی جیسے اسٹرکچر میں نمودار ہوگئے تھے۔ ڈاکٹروں نے اس انوکھے مرض کیلئے سرجری کی تجویز کی جو والدین نے بھی مان لی مگر بچے کو قائل کرنے میں کئی گھنٹے لگ گئے۔

ڈاکٹروں کا کہنا تھا کہ اس بیماری کو ابتدائی مرحلے میں ہی پکڑ لیا گیا تھا اور 5 گھنٹے کی محنت کے بعد 526 دانتوں کو اس تھیلی سے نکال دیا گیا۔

ان دانتوں کا حجم بھی مختلف تھا جو کہ 0.1 ملی میٹر سے 15 ملی میٹر تھا، اب اس بچے کے منہ میں 21 دانت ہیں۔

واضح رہے کہ اس عمر کے بچوں کے منہ میں اکثر 20 جبکہ بالغ افراد کے منہ میں 32 دانت ہوتے ہیں۔

اس بیماری کی وجہ تو تاحال معلوم نہیں ہو سکی لیکن ڈاکٹروں کے خیال میں یہ جینیاتی عارضہ ہو سکتا ہے جبکہ محققین یہ بھی دیکھ رہے ہیں کہ موبائل فون ٹاور کی ریڈی ایشن بھی تو اس کے پیچھے نہیں۔ جہاں تک بچے کی بات ہے تو وہ صحت یاب ہوگیا ہے اور اب اسے 16 سال کی عمر کے بعد داڑھوں کی پیوندکاری کی ضرورت پیش آئے گی۔

Facebook Comments