کورونا وائرس: چین دنیا بھر میں ویکسینز کی فراہمی کے لیے تیار

corona vaccines
02دسمبر2020
فوٹو بشکریہ سی این این

ویب ڈیسک: (بیجنگ) چین دنیا بھر میں اپنی تیار کردہ کورونا ویکسینز کے لاکھوں ڈوز فراہم کرنے کے لیے تیاریاں مکمل کر چکا ہے۔

سی این این کی رپورٹ کے مطابق شینزن انٹرنیشنل ایئرپورٹ کے گوداموں میں سفید چیمبرز قطار در قطار موجود ہیں، جن کے باہر ڈسپلے سے اندر کے درجہ حرارت کو دیکھا جاسکتا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ گودام کے اس حصے میں داخل ہونے والے ہر فرد کو یا تو 2 ہفتے تک مکمل قرنطینہ میں رہنا ہوگا یا سر سے پیر تک حفاظتی سوٹ پہننا ہو گا۔

یہ خصوصی کمرے مجموعی طور پر 350 اسکوائر میٹر تک پھیلے ہوئے ہیں اور بہت جلد یہ چینی ساختہ کووڈ 19 ویکسینز سے بھرے جائیں گے، جس کے لیے ریگولیٹری منظوری کا انتظار کیا جائے گا۔

خصوصی کمروں میں پہنچانے کے بعد کورونا ویکسینز کو مال بردار طیاروں کے کنٹرول درجہ حرارت والے کمپارٹمنٹس میں رکھا جائے گا اور اس کے بعد دنیا بھر کے ممالک میں روانہ کیا جائے گا۔ آنے والے مہینوں میں چین کی جانب سے کورونا وائرس ویکسینز کے کروڑوں ڈوز ان ممالک میں بھیجے جائیں گے جہاں اس وقت اس کی کمپنیوں کی جانب سے ان ویکسینز کے آخری مرحلے کے ٹرائلز ہو رہے ہیں۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے: روسی کمپنی نے دنیا کی سستی ترین کورونا ویکسین کی قیمت کا اعلان کر دیا

چینی قیادت نے یہ بھی وعدہ کیا ہے کہ وہ ترقی پذیر ممالک کو کامیاب ویکسینز تک رسائی ترجیحی بنیادوں پر فراہم کرے گی۔ امریکا کے کونسل آن فارن ریلیشن کے عالمی صحت کے ماہر یان زونگ ہوانگ کے مطابق ان ویکسینز کو چین کی جانب سے بین الاقوامی سطح پر اپنا اثررسوخ بڑھانے کے لیے استعمال کیا جائے گا۔

چین میں اس وقت 4 کمپنیوں کی جانب سے 5 ویکسینز انسانی ٹرائل کے آخری مرحلے میں داخل ہوچکی ہیں اور ان کے نتاج کے بعد ریگولیٹری منظوری حاصل کی جائے گی۔ چین میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد بہت کم ہونے کے باعث ویکسینز کے آخری مرحلے کی آزمائش کم از کم 16 ممالک میں جاری ہے، جن میں پاکستان بھی شامل ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے: کورونا سے نمٹنے کیلئے کس ملک نے پاکستان کو کتنی امداد دی؟

اس کے عوض ان میں سے بیشتر ممالک کو کامیاب ویکسینز تک ابتدا میں رسائی فراہم کی جائے گی اور کچھ کیسز مین مقامی سطح پر تیاری کے لیے ٹیکنالوجی بھی فراہم کی جائے گی۔ سینویک بائیوٹک کی جانب سے ویکسین کی تیاری ابھی مکمل نہیں ہوئی مگر اس نے برازیل کو 4 کروڑ 60 لاکھ جبکہ ترکی کو 5 کروڑ ڈوز فراہم کرنے کا معاہدہ کرلیا ہے۔

کین سینو بائیولوجکس کی جانب سے 5 ممالک میں ویکسین کے ٹرائل پر کام ہورہا ہے اور ان میں سے میکسیکو کو وہ 3 کروڑ 50 لاکھ ڈوز فراہم کرے گی۔ چائئنا نیشنل بائیوٹیک گروپ (چین کے سرکاری چائنا فارما سیوٹیکل گروپ یا سینوفارم) کی جانب سے 2 ویکسینز تیار کی جارہی ہیں جن کے تیسرے مرحلے کے ٹرائل 10 ممالک ممیں جاری ہیں۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے: چین ہمارا کورونا ویکسین کا فارمولا چوری کرنے کی کوشش کر رہا ہے، امریکا

ان ویکسینز کو ایمرجنسی استعمال کے لیے بھی منظور کیا جاچکا ہے تاہم کمپنی نے ممالک سے معاہدوں کے حوالے سے زیادہ تفصیلات ظاہر نہیں کیں، مگر متحدہ عرب امارات کو اگلے سال ساڑھے 7 کروڑ سے 10 کروڑ ڈوز فراہم کیے جائیں گے۔ سینوفارم کے چیئرمین لیو جنگ زین نے گزشتہ ماہ بتایا تھا کہ درجنوں ممالک نے کمپنی کی ویکسینز خریدنے میں دلچسپی ظاہر کی ہے۔

انہوں نے ممالک کے نام یا ان کو فراہم کیے جانے والے ڈوز کے بارے میں کچھ نہیں بتایا مگر ان کا کہنا تھا کہ وہ 2021 میں ایک ارب سے زیادہ ڈوز فراہم کرنے کی اہلیت رکھتے ہیں۔

Facebook Comments