چقندر کھانے کے ایسے حیرت انگیز فوائد، جن سے آپ لا علم ہوں گے

Beet root
14مارچ2022
(فوٹو: شٹر اسٹاک)

ویب ڈیسک: ( لاہور ) موسم سرما میں بآسانی دستیاب اور غذائیت سے بھرپور ’’چقندر ‘‘ ایسی غذا ہے جس میں فائبر،فولیٹ،میگنیز،پوٹاشیم،آئرن اور وٹامن سی کثیر تعداد میں موجود ہوتے ہیں۔

غذائی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ چقندر کے استعمال سے بلڈ پریشر،کینسر کے امراض کو کنٹرول کیا جا سکتا ہے جبکہ انسان کی جسمانی کارکردگی میں بھی خاطر خواہ اضافہ ہوتا ہے کیونکہ اس میں غیر نامیاتی “نائٹریٹس” موجود ہوتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق موذی مرض کینسر کی وجہ سے انسانی جسم میں بے قابو خلیات کی تعداد بڑھ جاتی ہے۔ چقندر میں موجود “اینٹی آکسیڈینٹس” اور “اینٹی انفلیمینٹری” خصوصیات موجود ہوتی ہیں جو کینسر کے خلاف مزاحمت کا کام سر انجام دیتی ہیں جبکہ جانوروں میں چقندر کا استعمال ٹیومر کے خلیوں کی نشوونما کم کرنے کا باعث بھی بنتا ہے۔

تحقیق کے مطابق ہائی بلڈ پریشر کا مرض جہاں خون کی شریانوں اور دل کے امراض کا باعث بنتا ہے وہیں برین اسٹروک اور قبل از وقت موت جیسے خطرناک عوامل کو بھی جنم دیتا ہے۔چقندر کے جوس کے استعمال سے چند گھنٹوں کے دوران ہی بلڈپریشر میں 3-10mmHg تک کمی لائی جا سکتی ہے۔

دائمی سوزش کو موٹاپا، قلب،جگر اور کینسر کی بیماریوں کی وجہ سمجھا جاتا ہے۔چقندرمیں موجود “بیٹیلین” نامی رنگدار مادہ موجود ہوتا یے جو درحقیقت اینٹی انفلیمینٹری خصوصیات رکھتا ہے۔اس کے استعمال سے گردوں پر آنے والی سوزش کو کافی حد تک کم کیا جا سکتا ہے۔

حالیہ تحقیق کے مطابق چقندر میں وافر مقدار میں اینٹی آکسیڈنٹس موجود ہوتے ہیں جو چہرے سے داغ دھبوں،جھائیوں اور جلد کی خشکی دور کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔تحقیق میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ فائبر صحت مند غذائی جزو ہے جو نظام انہضام کی بہتری کے لیے بہت ضروری ہے۔ایک کپ چقندر کے جوس میں 3.4 گرام فائبر موجود ہوتا ہے جو اس نظام کی بہتری کے ساتھ کینسر،بلڈ پریشر اور دل کی بیماریوں سے بچاؤ میں بھی کارآمد ثابت ہوتا ہے۔

Facebook Comments