فاسٹ فوڈ کا موٹاپے کے علاوہ ایک اور بڑا نقصان سامنے آ گیا

Fast Food Burger
13ستمبر2019
(فوٹو بشکریہ گوگل)

ویب ڈیسک: یہ تو کوئی راز نہیں کہ برگر اور آلو کے تلے ہوئے چپس موٹاپے کو بڑھانے کا سبب بنتے ہیں لیکن کیا آپ یہ بھی جانتے ہیں کہ وہ آپ کی ذہانت کو بھی کھا جاتے ہیں؟

چند تحقیق کے مطابق جنک یا فاسٹ فوڈ آپ کو احمق بنانے میں اہم کردار ادا کررہے ہیں۔ ماضی میں سامنے آئی ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ مغربی طرز کی خوراک کو زیادہ استعمال کرنے والے ذہنی طور پر پیچھے رہ جاتے ہیں۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے: فرنچ فرائز کسے نہیں پسند! لیکن اسے کھانا آپ کو بڑی بیماری میں مبتلا کر سکتا ہے

تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ فاسٹ فوڈ، تلے ہوئے کھانے اور پراسیس گوشت وغیرہ کا ذہنی صلاحٰت، سیکھنے، یاداشت اور ردعمل کے وقت پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔ تحقیق میں مزید بتایا گیا ہے کہ اس کی وجہ سے سبز سبزیوں سے دوری ہے جو انسان کی ذہنی نشوونما کو بڑھاتی ہیں۔
فاسٹ فوڈ میں شامل متعدد اجزاءذہنی صلاحیتوں پر اثر انداز ہوتے ہیں خاص طور پر اس میں اومیگا سکس فیٹی ایسڈز کی زیادہ مقدار کافی نقصان دہ ثابت ہوتی ہے۔

یہ بھی ملاحظہ کیجئے: دل کے جان لیوا دورے سے محفوظ رہنا چاہتے ہیں تو پھل اور سبزیوں کا استعمال کیجئے

فاسٹ فوڈ میں شامل بہت زیادہ چربی اور عام کاربوہائیڈریٹس دماغ کے یاداشت اور سیکھنے کے عمل میں ملوث حصے پر اثرانداز ہوتے ہیں، خاص طور پر اگر یہ مغربی خوراک استعمال کرنے والا لڑکپن یا نوجوانی کی عمر میں ہو۔

Facebook Comments