وٹامن ڈی کا بریسٹ کینسر کو روکنے میں اہم کردار

Breast Cancer
18نومبر2018
(فوٹو بشکریہ گوگل)

ویب ڈیسک: یوں تو وٹامن ڈی ہڈیوں کو مضبوط کرنے اور بڑھاپے میں ہڈیوں کی کمزوری سے پیدا ہونے والی بیماریوں سے محفوظ رکھنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے لیکن اس کا دوسرا بڑا فائدہ یہ ہے کہ خواتین میں بریسٹ کینسر کی شدت میں کمی لانے میں بھی یہ بہت مؤثر ثابت ہوتا ہے۔

امریکہ میں موجود ایک طبی تحقیقی ادارے سے منسلک ڈاکٹر لارنس کا کہنا ہے کہ انکے مشاہدے کے مطابق بریسٹ کینسر میں مبتلا وہ خواتین جو وٹامن ڈی کا زیادہ استعمال کر تی تھیں انکے بریسٹ کینسر کی شدت میں نہ صرف کمی دیکھنے میں آئی بلکہ اس مرض کے باعث ان کی ہلاکتوں کی شرح بھی30 فیصد تک کم رہی۔

ڈاکٹر لارنس کہتے ہیں کہ وٹامن ڈی نہ صرف چھاتی کے خلیوں کی نشونما میں اضافہ کرتا ہے بلکہ یہ کینسر کے خلاف مزاحمت کرتے ہوئے کینسر کے خلیات کی نشونما کو روکتا ہے۔

ماہرین کہتے ہیں کہ وٹامن ڈی کی کمی مزید کئی اقسام کے کینسر میں مبتلا کر سکتی ہے اس لئے وٹامن ڈی کے حصول کیلئے دودھ ،مچھلی اور وٹامن ڈی کے سپلیمنٹس کا استعمال کرنا چاہیئے اور دن میں کچھ دیر کیلئے دھوپ میں بھی وقت گزارنا چاہیئے۔

واضح رہے کہ کینسر میں مبتلا مریضوں میں بریسٹ کینسر کے باعث مرنے والوں کی تعداد زیادہ ہے جبکہ ترقی یافتہ ممالک میں اس مرض کی شرح دوسرے ممالک سے کئی گنا زیادہ ہے، صرف یورپ میں 4لاکھ سے زائد خواتین اس مرض کا شکار ہیں۔

بریسٹ کینسر کے اسباب

ماہرین کہتے ہیں کہ غیر فعال زندگی گزارنا،ورزش نہ کرنا اور موٹاپا بریسٹ کینسر کا سبب بنتا ہے ،دوسری جانب 30سال سے کم عمر میں بچوں کی پیدائش اور بچوں کو طویل عرصے تک دودھ پلانا بریسٹ کینسر کے خطرے میں کمی واقع کرتا ہے۔

Facebook Comments